روہت کی سنچری کے باوجود ہندوستان میزبان انگلینڈ سے 31رنز سے ہار گیا

برمنگھم: انگلینڈ نے وکٹ کیپر جونی بیرسٹو کی شاندار سنچری اور جیسن رائے اور بین اسٹوکس کی عمدہ ہاف سنچریوں کی مدد سے انگلینڈ نے ہندوستان کو 31رنز سے شکست دے کر جہاں ایک طرف سیمی فائنل میں پہنچنے کے اپنے امکانات روشن رکھے وہیں اس نے1992کے بعد کسی ورلڈ کپ میں پہلی بار ہندوستان کو شکست دینے میں کامیابی حاصل کر لی ۔

علاوہ ہندوستان کی شکست کے بعد اب رواں ورلڈ کپ میں کھیل رہی کوئی ٹیم غیرمفتوح رہتے ہوئے سیمی فائنل میں پہنچنے کا اعزاز نہیں پا سکے گی۔ ورنہ اب تک صرف ہندوستان کو ہی یہ اعزاز حاصل تھا کہ وہ اب تک کھیلے گئے اپنے چھ میں سے ایک بھی میچ نہیں ہارا تھا۔338کے تعاقب میں ہندوستان عملاً اسی وقت شکست کی راہ پر چل پڑا تھا جب وہ پہلے پاور پلے کے دس اووروں میں صرف 28رنز ہی بنا سکا ۔ایسا لگ رہا تھا کہ ٹیم انڈیا کے وہ بلے با زجو ون ڈے اور ٹی ٹونٹی کے ماہر ہیں اس میچ میں ایسا کھیلیں گے گویا وہ کوئی ٹیسٹ میچ کھیل رہے ہوں ۔

لیکن بہت جلدی روہت شرما ، رشبھ پنت اور ہاردیک پانڈیانے انگز کو سنبھال لیا اور ٹیم کو ہدف کے کچھ اور قریب لے آئے ۔لیکن بہترین فنشر کا ٹیگ لگائے گھوم رہے مہندرسنگھ دھونی اور قابل اعتماد آل راؤنڈر کا اعزاز لیے کیدار جادوھو آخری دس اوور وں میں ،جس میں صرف دو فیلڈرز ہی سرکل کے باہر تعینات کیے جا سکتے تھے، بے دلی یا اپنی وکٹ بچانے کے لیے کھیلتے ہوئے ہدف تک پہنچنے کے ہندوستان کے امکانات بالکل ہی تاریک کر دیے۔اگرچہ اس دوران روہت نے 109گیندوں پر 15چوکوں کی مدد سے102اور کپتان وراٹ کوہلی نے 76گیندوں پر 7چوکوں کے ساتھ66رنز کی اننگز کھیل کر ہندوستان کی اننگز کو سنبھالا اور آل راونڈر ہاردیک پانڈیا نے مڈل اووروں میں 33بالوں پر چار چوکوں کی مدد سے45رنز بنا کر ٹیم کو ہدف تک لے جانے والی راہ پر ڈال دیا تھا۔دھونی نے آخری لمحات میں کچھ لمبی ہٹیں لگا کر31گیندوں پر چار چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے42رنز بنائے۔

رشبھ پنت نے پہلی ورلڈ کپ اننگز کھیلتے ہوئے 29گیندوں پر 4چوکوں کے ساتھ32رنز بنائے۔ اور ہندوستان مقررہ50اووروں میں 5وکٹ پر 306رنز ہی بنا سکا۔ انگلینڈ کی طرف سے معین علی کی جگہ ٹیم میں شامل کیے جانے والے فاسٹ بولر پلینکٹ نے تین وکٹ لیے جبکہ ووکس کو دو وکٹ ملے۔ اس سے قبل انگلینڈ نے مقررہ50اووروں میں7وکٹ پر337رنز بنائے۔

جس میں بیرسٹو نے 10چوکوں اور چھ چھکوں کی مدد سے109گیندوں پر 111، اسٹوکس نے 54گیندوں پر چھ چوکوں اور تین چھکوں کے ساتھ79، جیسن رائے نے 57گیندوں پر7چوکوں اور 2چھکوں کی مدد سے 66اور جو روٹ نے 54گیندوں پر دو چوکوں کے ساتھ44رنز بنائے۔ ہندوستان کی طرف سے فاسٹ بولر محمد شامی 5وکٹ لے کر سب سے کامیاب بولر رہے جبکہ بومرا اور کلدیپ کو ایک ایک وکٹ ملی۔محمد شامی نے کسی ورلڈ کپ میچ میں پہلی بار پانچ یا اس سے زائد وکٹ لینے والے ہندوستانی بولر ہونے کا اعزاز حاص کیا۔بیرسٹو کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jonny bairstow and ben stokes help end indias unbeaten run in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.