وراٹ نے دھونی کی وکالت کرکے احسان کا بدلہ احسان سے دیا

کنگسٹن: ہندوستانی کپتان وراٹ کوہلی نے سست بلے بازی کی وجہ سے تنقید کا سامنا کرنے والے سابق کپتان مہندر سنگھ دھونی کا دفاع کرتے ہوئے دھونی کا تین سال پرانا قرض اتار دیا ہے۔ ہندستان کے پانچویں ون ڈے جیتنے اور سیریز 3۔1 سے اپنے نام کرنے کے بعد پریس کانفرنس میں دھونی کا دفاع کرتے ہوئے وراٹ نے کہا کہ وہ انہیں لے کر قطعی فکر مند نہیں ہیں۔ وراٹ نے دھونی کے بارے میں پوچھے جانے پر کہا کہ مجھے لگتا ہے کہ ہم ایک آدھ میچ کے بعد صبر کھو بیٹھتے ہیں۔ایسا کسی کے ساتھ بھی ہو سکتا ہے۔کوئی بھی بلے باز جدوجہد کر سکتا ہے اور کوئی بھی بلے باز کریز پر پھنس سکتا ہے اور اسٹرائیک روٹیٹ نہیں کر پاتا ہے۔ دھونی نے چوتھے ون ڈے میں انتہائی سست نصف سنچری بنائی تھی اور ان کے تقریبا 50 اوور تک کریز پر رہنے کے باوجود ہندستان 190 رنز کا ہدف حاصل نہیں کر پایا تھا۔دھونی نے حیرت انگیز طور پر 114 گیندوں پر 54 رنز کی اننگز کھیلی تھی جبکہ وہ دنیا کے بہترین فنشر مانے جاتے ہیں۔
.اس میچ کے بعد دھونی کی سست اننگز کی کافی تنقید ہوئی اوریہ بھی کہا جانے لگا کہ وہ اب میچ کو فننش کرنے میں چوکنے لگے ہیں لیکن کپتان وراٹ نے دھونی کا دفاع کر کےجیسے ایک پرانا قرض اتار دیا ہے۔ بات ہندستان کے 2014 دورہ انگلینڈ کی جب وراٹ بلے سے مسلسل فلاپ ہو رہے تھے۔ ٹیسٹ سیریز میں وراٹ کے بلے سے 1،8، 25، 0، 39، 28، 0، 7، 6 اور 20 اور ون ڈے سیریز میں 0،40، ناٹ آؤٹ 1 اور 13 رن کے اسکور نکلے تھے۔ تب وراٹ تنقید کے گھیرے میں آ گئے لیکن تب کپتان دھونی نے مسلسل ان کا دفاع کرتے ہوئے کہا تھا کہ وراٹ کو صرف ایک اچھی اننگز کی ضرورت ہے۔اگر اس وقت کوئی اور بلے باز ہوتا تو کب کا ٹیم سے باہر کر دیا گیا ہوتا لیکن دھونی برابر وراٹ کے ساتھ کھڑے رہے۔ دورہ انگلینڈ سے واپس آنے کے بعد وراٹ نے دھرم شالہ میں ویسٹ انڈیز کے خلاف ون ڈے میں سنچری بنائی اور پھر پیچھے مڑ کر نہیں دیکھا۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: It can happen to anyone virat defends ms dhonis slow innings in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply