لندن اولمپکس میں تاریخ ساز کامیابی سے بہتر کچھ کر دکھانے کے عزم کے ساتھ ہندوستانی دستہ ریو ڈی جنیرو پہنچا

ریو ڈی جینرو: (یو این آئی) لندن اولمپکس کی ریکارڈ ساز کامیابی کو پس پشت ڈال کر اور ایک نئی تاریخ بنانے کے مصمم عزم کے ساتھ 125 کروڑ شائقین کی امیدوں کے رتھ پر سوار ہندستان کا اب تک سب سے بڑا دستہ جمعہ سے شروع ہو رہے کھیلوں کے مہاکمبھ ریو اولمپکس کے کھیل گاؤں میں داخل ہو چکا ہے۔
ہندوستان کو ریو اولمپکس شروع ہونے سے کچھ دن پہلے ڈوپنگ تنازعہ سے گزرنا پڑا لیکن پہلوان نرسمہا یادو اس تنازعہ سے فاتح کی طرح باہر نکل آئے جبکہ شاٹ پٹر اندرجیت سنگھ اور 200 میٹر کے رنر دھر م بیر سنگھ ڈوپنگ میں پھنس گئے۔ان تنازعات کے باوجود 118 رکنی ہندستانی ٹیم سے ریکارڈ ساز کارکردگی کی امید کی جا رہی ہے۔ہندستان نے چار سال پہلے لندن اولمپکس میں دو چاندی اور چار کانسی سمیت چھ تمغے جیتے تھے لیکن اس بار اس تعداد کے دگنا ہونے کی امید کی جا رہی ہے۔
وزیر اعظم نریندر مودی نے ریو جانے والے کھلاڑیوں سے ذاتی طور سے ملاقات کر کے ایک شاندار پہل کی تھی اور انہیں اپنی نیک خواہشات دی تھیں۔ریو میں اس بار ہندستان نے جس طرح بڑا دستہ بھیجا ہے اس سے 125 کروڑ ہندستانی شائقین کی امیدیں اور بھی بڑھ گئی ہیں کہ ہندستان تمغوں کی تعداد میں اضافہ کرے گا اور لندن سے آگے نکلے گا۔ دنیا کی معروف ریٹنگ ایجنسی پرائس واٹرہاسکوپرس نے ہندستان کے 12 تمغے جیتنے اور ٹاپ 20 ممالک میں پہنچنے کی پیش گوئی کی ہے۔
پرائس واٹرہاسکوپرس نے لندن اولمپکس میں ہندستان کے چھ تمغہ جیتنے کی پیش گوئی کی تھی جو صحیح ثابت ہوئی تھی۔ہندستان اگر لندن اولمپکس سے زیادہ تمغے حاصل کرلیتا ہے تو یہ اس کے لیے بڑی کامیابی ہوگی۔تاہم لندن اولمپکس کے دو چاندی کے تمغہ یافتگانپہلوان سشیل کمار اور شوٹر وجے کمار اور کانسی کا تمغہ جیتنے والی خاتون باکسر ایم سی میری کوم اس بار ٹیم میں نہیں ہیں لیکن ٹیم میں کئی ایسے عالمی کھلاڑی ہیں جن کا لوہا ایک دنیا مانتی ہے۔
شوٹر ابھینو بندرا، گگن نارنگ اور جیتو رائے، بیڈمنٹن اسٹار سائنا نہوال، پہلوان یوگیشور دت اور نرسمہا یادو، ٹینس اسٹار ثانیہ مرزا، لینڈر پیس، روہن بوپنا، باکسر شیوا تھاپا اور وکاس کرشنن، آرچر دیپکا کماری، ڈسکس تھرور وکاس گوڑا، جمناسٹ دیپا کرماکر اور مرد ہاکی ٹیم ہندستان کو تمغہ دلانے کا دم خم رکھتے ہیں۔ان اسٹار کھلاڑیوں میں سے اگر نصف بھی اپنی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کر جائیں، ہندوستان لندن سے آگے نکل سکتا ہے۔ ریو اولمپکس میں ہندستان 15 کھیلوں کے 66 مقابلوں میں حصہ لے گا۔
ان میں سے سب سے زیادہ 20مقابلے ایتھلیٹکس میں ہوں گے۔ اس کے بعد شوٹنگ کے 11 مقابلوں میں ہندوستانی کھلاڑی حصہ لیں گے۔کشتی میں سات اور بیڈمنٹن میں چار مقابلوں میں ہندستانی اپنا چیلنج پیش کریں گے۔تیر اندازی اور ٹینس کے تین تین مقابلوں میں ہندوستانی امیدیں داؤ پر رہیں گی۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: India will do better at rio than in london olympics in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply