اولمپکس میں چوتھا مقام پانابھی کوئی معمولی کامیابی نہیں ہے:بندرا

ریو ڈی جینرو، :’گولڈن بوائے‘ کے نام سے معروف ہندستانی اسٹار شوٹر ابھینو بندرا نے اپنے آخری اولمپک میں تمغہ نہیں جیت پانے پر مایوسی ظاہر کرتے ہوئے پیر کو کہا کہ اس بار تمغہ ان کی قسمت میں نہیں تھا۔
33 سالہ بندرا نے 10 میٹر ایئر رائفل مقابلے میں چوتھے مقام پر رہنے کے بعد انتظار کر رہے ہندستانی میڈیا سے کہاکہ کسی نہ کسی کو تو چوتھے مقام پر آنا ہی تھا اور اس وقت وہ چوتھا کھلاڑی میں تھا۔میں اولمپک سے ریٹائرمنٹ لینے کا اعلان کر چکا ہوں اور میں اس کا اختتام طلائی سے کرنا چاہتا تھا لیکن ایسا نہیں ہو سکا۔تمغہ اس بار میری قسمت میں نہیں تھا لیکن پھر بھی مجھے اپنی کامیابی پر فخر ہے۔ بندرا نے کہاکہ اولمپکس میں چوتھے مقام پر رہنا بھی کوئی کم کامیابی نہیں ہے۔یہ ایک بہت بڑا ایونٹ ہے۔
آپ کتنی بھی بار اولمپکس میں حصہ لے سکتے ہیں لیکن ہر بار آپ کو نئے دباؤ کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔مجھے دکھ ہے کہ میں ملک کے نام تمغہ نہیں جیت سکا لیکن میں اپنی کارکردگی سے خوش ہوں۔آپ اپنے بہتر دیتے ہیں اور پھر آپ کو امید کے ساتھ انتظار کرنا ہوتا ہے۔
بندرا کے ٹیم کے ساتھی گگن نارنگ نے کہاکہ میں بھی بندرا کو پوڈیم پر دیکھنا چاہتا تھا کیونکہ یہ ان کا آخری اولمپک تھا۔مجھے بے حد خوشی ہوتی اگر وہ تمغہ جیتتے۔تاہم نارنگ نے اپنی کارکردگی کے بارے میں کچھ بھی نہیں کہا۔انہوں نے کہاکہ میرے ابھی دو ایوینٹ باقی ہیں اور میں ان کے بعد ہی اپنی کارکردگی پر بات کروں گا۔
سابق اولمپین منشیر سنگھ نے کہاکہ مجھے لگتا ہے کہ بندرا نے تھوڑی جلدی د?ھائ?۔میرا خیال ہے کہ بندرا وہی کرنا چاہتے تھے جو انہوں نے بیجنگ اولمپکس میں کیا تھا اور تیزی سے حریف پر دباؤ بنانے کی کوشش کرتے لیکن بدقسمتی سے ان کی امید پوری نہیں ہو سکی۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: I am at peace with my decision to retire bindra in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply