جنوبی افریقہ کے خلاف انگلستان کی کراری شکست پر سابق انگریز کھلاڑی تلملا اٹھے

ناٹنگھم: جنوبی افریقہ کے ہاتھوں شکست کے بعد مایوس انگلینڈ کرکٹ ٹیم کو اپنے سابق کرکٹروں مائیکل وان، ناصر حسین جیسے عظیم کھلاڑیوں کی سخت تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ سابق کھلاڑی وان نے جنوبی افریقہ ٹیم کے خلاف انگلش بلے بازوں کی کارکردگی پر سخت مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ میچ میں بلے بازوں کی کارکردگی کافی ناقص تھی جس کی وجہ سے انگلینڈ کو 340 رنز کی زبردست شکست کھانی پڑی ہے۔ وان نے ساتھ ہی کہا کہ انگلینڈ کے کھلاڑیوں کو دیکھ کر ایسا لگ رہا تھا کہ وہ ٹوئنٹی 20 کھیل رہے ہیں۔ ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے انگلینڈ کی ٹیم 133 رنز پر سمٹ گئی تھی اور میچ میں اسے جنوبی افریقہ سے اپنی رن کے لحاظ سے دوسری سب سے بڑی شکست کا سا مناکرنا پڑا۔ یہ انگلینڈ ٹیم کی حالیہ 10 میچوں میں ساتویں ٹیسٹ شکست ہے۔
وان نے کہا کہ انگلینڈ ٹیم ٹیسٹ کے مطابق خود کو متحد نہیں کر پا رہی ہے۔ وان کے علاوہ دیگر سابق انگلینڈ کے کپتان ناصر حسین نے بھی کافی تنقید کی ہے۔ جیف بائیکاٹ نے بھی انگلش کھلاڑیوں کی کارکردگی کو بے حد خراب قرار دیا۔ اگرچہ موجودہ انگلش کپتان روٹ نے وان کی تنقید پر مایوسی ظاہر کی ہے اور کہا کہ وہ اس بات پر یقین نہیں کر سکتے کہ سابق کرکٹر اس طرح کی بات کر سکتے ہیں۔ وان کو اپنا آئیڈیل ماننے والے روٹ نے کہا “یہ بہت غلط ہے۔ میں سچ کہوں تو مجھے یقین نہیں ہوتا کہ انہوں نے یہ بات کہی ہے۔ ہم اس طرح کی سیریز جیتنے میں فخر محسوس کرتے ہیں لیکن اس ہفتے ہم نے خراب کھیلا۔ روٹ نے اگرچہ تسلیم کیا ہے کہ میچ میں بلے بازوں کی کارکردگی کافی مایوس کن تھی اور ٹیم کی اپنی صلاحیت کے مطابق نہیں کھیل سکی۔انہوں نے ساتھ ہی کہا کہ وہ اس بات کو تسلیم کرتے ہیں کہ اگر انگلینڈ کو اس طرح کے میچ جیتنے ہیں تو انہیں ون ڈے کرکٹ سے ٹیسٹ میں خود کو جلد ہم آہنگ کرنا سیکھنا ہوگا۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: England cricket team lambasted by many former players in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply