پشاور زلمی۔اسلام آباد یونائیٹڈ کے درمیان پی ایس ایل فائنل اتوار کو کراچی میں، کامران نے حنیف محمد کیپ جیتی

لاہور: جو ڈینلی اور بابر اعظم کے درمیان دوسرے وکٹ کے لیے 117رنز کی پارٹنر شپ اس وقت بے ثمر ثابت ہوئی جب دفاعی چمپین پشاور زلمی نے کراچی کنگز کو 13رنز سے شکست دے کر اتوار کو کراچی میں اسلام آباد یونائیٹڈ کے خلاف پی ایس ایل فائنل کھیلنے کا حق حاصل کر لیا۔بارش سے متاثرہ میچ میں جو16اووروں کاکردیا گیاتھا، 171رنز ہدف کے تعاقب میں کراچی کنگز دو وکٹ پر 157رنز ہی بنا سکی۔
ڈینلی 46گیندوں پر 9چوکوں اور چار چھکوںکی مدد سے79رنز بنا کر غیر مفتوح رہے۔ بابر اعظم نے 45بالوں پر 63رنز بنائے جس میں انہوں نے چھ چوکے اور دو چھکے لگائے۔
اس سے قبل کامران اکمل کے27بالوں پر پانچ چوکوں اور8چھکوں کی مدد سے 77رنز کی اننگز کی بدولت پشاور زلمی نے 16اووروں میں 7وکٹ پر170رنز بنائے۔
کامران اکمل شروع کے تین اووروں میں بڑے پر سکون رہے کیونکہ ان میں سے دو اوور فاسٹ بولر محمدعامر نے کیے تھے ۔
لیکن ان کی جگہ بولنگ کے لیے جیسے ہی عثمان خان آئے کامران جوش میں آگئے اور عثمان خان کی ایسی شامت آئی کہ کامران نے ان کا استقبال دو چھکوں اور تین چوکوں کے ساتھ 25رنز بنا کر کیا۔
اس کے بعد تو کامران بے قابو ہو گئے اور ایک اور عثمان (میر) کی ایسی خبر لی کہ انہوں نےدو چھکوں اور ایک چوکے کے ساتھ جہاں کامران اکمل کو19رنز بٹورنے کا موقع دیا وہیں انہیں اس سیزن کی تیزترین ہاف سنچری بنانے والے بلے باز ہونے کابھی اعزاز دلوادیا۔
کامران نے 17گیندوں پر ہاف سنچری مکمل کی۔انہیں مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔انہیں ٹورنامنٹ میں اب تک کا سب سے زیادہ رنز بنانے والا بلے باز ہونے کے باعث حنیف محمد کیپ سے بھی سرفراز کیاگیا۔ انہیں یہ ٹوپی یونس خان نے اوڑھائی۔

Title: dominant kamran akmal propels peshawar into final | In Category: کھیل  ( sports )
Tags: ,

Leave a Reply