انگلستان نے ویسٹ انڈیز کے خلاف ٹونٹی ٹونٹی میچوں کی سریز 3-0سے جیت لی

باسیتیر (سینٹ کٹس): فاسٹ بولروں ڈیوڈ ولی اور اینڈریو ووڈ اور لیگ اسپنر عادل رشید کی تباہ کن بولنگ کی مدد سے انگلستان نے میزبان ویسٹ انڈیز کو8وکٹ سے شکست دے کر تین ٹونٹی ٹونٹی میچوں میں 3-0سے کلین سوئپ کر دیا۔ 72رنز کے ٹارگٹ کا تعاقب کرتے ہوئے انگلستان کے بلے بازوں کو کوئی خاص پریشانی نہیں محسوس ہوئی اور ابھی 9اعشاریہ3اوور باقی تھے کہ اننگز کے 11ویں اور گگلی بولر بشو کے دوسرے اوور کی دوسری گیند پر چھکا اور تیسری گیند پر چوکا لگا کر کپتان مورگن نے انگلستان کو ایک آسان جیت سے ہمکنار کر دیا۔

اس جیت کے ساتھ ہی انگلستان نے تین ٹونٹی ٹونٹی میچوں کی سریز 3-0سے جیت کر ٹیسٹ سریز میں شکست کا حساب بیباق کر دیا۔واضح ہو کہ انگلستان نے پہلا ٹونٹی ٹونٹی میچ 4وکٹ سے اور دوسرا 137رنز سے جیتا تھا۔باسیتیر میں ہی تیسرا میچ کھیلتے ہوئے ویسٹ انڈیز کو71کے قلیل اسکور پر آؤٹ کرنے کے بعد انگلستان نے جیت کے لیے مطلوبہ اسکور72رنز صرف دو وکٹ کے نقصان پر بنا لیے۔

ہیلز نے 13گیندوں پر 3چوکوں کی مدد سے20اور بیرسٹو نے31گیندوں پر 37رنز بنائے ۔ جس میں انہوں نے چار چوکے اور دو چھکے لگائے۔کپتان مورگن 8گیندوں پر ایک چوکے اور ایک ہی چھکے کے ساتھ10رنز بنا کر غیر مفتوح رہے۔ اس سے قبل ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ ویسٹ انڈیز کو اس وقت بھاری پڑا جب پاور پلے کے 5اووروں میں ہی اس کے چوٹی کے چار بلے باز محض24رنز پر پویلین سدھار گئے۔ کپتان ہولڈر اور پورن نے اننگز سنبھالنے کی کوشش کی لیکن ابھی ان دونوں کے درمیان پانچویں وکٹ کی رفاقت میں21رنز ہی بن پائے تھے کہ لیگ اسپنر جوو ڈینلی نے ہولڈر کو پویلین بھیج کرویسٹ انڈیز کا پانچوں وکٹ گرا دیا اس وقت اسکور صرف45رنز تھا۔ اس کے بعد کوئی بڑی پارٹنر شپ نہ ہو سکی اور اور کم و بیش ہر اوور میںایک وکٹ آؤٹ ہوتی رہی۔

کیمپ بیل، ہولڈر، اور پورن 11،11رنز بنا کر نمایاں رہے ۔ا ن تینوں میں سے صرف ہولڈر جنہوں نے ایک چھکا لگایا اور کیمپ بیل جنہوں نے دو چوکے لگائے گیند کو باؤنڈری کی سیر کرانے میں کامیاب ہو سکے۔ انگلستان کی طرف سے ویلی نے 4،ووڈ نے 3اور عادل رشید نے2وکٹ لیے۔ ڈیوڈ ولی کو مین آف دی میچ اور کرس جارڈن کو مین آف دی سریز قرار دیا گیا۔سریز کے دوسرے میچ میں جو بسیتیر میں ہی کھیلا گیا تھا اس میں بھی ویسٹ انڈین نژاد فاسٹ بولر کرس جارڈن کے طوفان میں انہی کے ہم وطن کھلاڑی کچھ اس طرح بہہ گئے تھے کہ ویسٹ انڈیز کی پوری ٹیم 11.5اووروں میں ہی محض 45رنز پر ڈھیرہو گئی تھی۔

وہ اس میچ میں 137رنز سے ہار کر 0-2سے پیچھے ہو کر سریزتو پہلے ہی ہار چکی تھی ۔ اگرچہ183ہدف کے تعاقب میں ویسٹ انڈیز کی افتتاحی جوڑی نے پہلے3اووروں میں ہی دو باؤنڈریاں لگا کر اپنے ارادے ظاہر کر دیے ۔لیکن اسکور ابھی12ہی تھا کہ ولی نے گیل کو پویلین کی راہ دکھا دی۔گیل کا آؤٹ ہونا انگلستان کے حق میں بڑا نیک شگون ثابت ہوا اور اس نے جارڈن کی مدد سے باقی 9کھلاڑیوں کو بھی محض33رنز کے عوض آؤٹ کر دیا۔ ہٹ مائر اور برتھ ویٹ کے علاوہ کوئی ویسٹ انڈین بلے باز ڈبل فیگر میں نہیں پہنچ سکا۔ برتھ ویٹ نے 4گیندوں پر 10اور ہٹ مائر نے 11گیندوں پر اتنے ہی رنز بنائے۔

برتھ ویٹ نے ایک چھکا اور ہٹ مائرف نے ایک چوکا لگایا۔جارڈن نے 2اووروں میں 6رنز دے کر چار کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ ولی،پلنکیٹ اور عادل رشید کو دو دو وکٹ ملے۔اس سے قبل دو ہاف سنچریوں کی مدد سے انگلستان نے مقررہ20اووروں میں 6وکٹ پر 182رنز بنائے۔حالانکہ صرف32رنز پر انگلستان کے جب 4کھلاڑی آؤٹ یو گئے تو ایسا لگ رہا تھا کہ انگلستان کی ٹیم شاید100رنز بھی نہیں بنا سکے گی لیکن جو روٹ نے40گیندوں پر 7چوکوں کی مدد سے55 اور بلنگس نے47گیندوں پر 10چوکوں اور تین چھکوںکی مدد سے87 رنز بنا کر ٹیم کو182رنز کا اسکور دے دیا۔ان دونوں کے درمیان پانچویں وکٹ کی پارٹنر شپ میں 82رنزبنے۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: David willey four for leads england series sweep as west indies are dismissed for 71 in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.