اشون کی تباہ کن بولنگ سے انگلینڈ پر شکست کے بادل تیسرے روز سے ہی منڈلانا شروع ہو گئے

موہالی: آف اسپنر روی چندر اشون کی شاندار بلے بازی کے بعد تباہ کن بولنگ کے باعث انگلینڈ کی حالت ایسی ہو گئی ہے کہ اگر36رنز بنا کر کریز پر موجود جو روٹ اور بیٹنگ کے لیے پویلین میں انتظار کر رہے حمید اور بٹلر پر مشتمل تسلیم شدہ بلے بازوں کی آخری جوڑی بھی کریز پر تادیر سلامت نہ رہی تو چوتھے روز ہی لنچ سے پہلے ہی وہ اننگز کی شکست سے دوچار ہو سکتا ہے۔ موہالی کے آئی ایس بندرا اسٹیڈیم میں 134رنز کے خسارے کے ساتھ اپنی دوسری اننگز شروع کرتے ہوئے انگلستان کے کپتان ایلسٹر کوک اور جو روٹ پر مشتمل نئی افتتاحی جوڑی نے بہت محتاط انداز اختیار کیا ۔لیکن کوک اسپن و فاسٹ باؤلنگ کے ملے جلے اٹیک کو زیادہ دیر نہ جھیل سکے اور 49گیندوں کی بڑی صبر آزما اننگز کھیل کر ایک چوکے کی مدد سے صرف12رنا بنا کر اشون کی گیند پر صاف بولڈ ہوگئے۔
اشون نے معین علی کو بھی ہوا میں چکمہ دے کر مڈ آن پر جینت یادو کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کراکے پویلین کی راہ دکھا دی۔ ابھی خسارے کی نصف منزل ہی طے ہوئی تھی کہ جینت یادو نے بیرسٹو کو وکٹ کیپر پٹیل کے ہاتھوں کیچ آؤٹ کرا دیا تھا ۔وکٹ کے پیچھے یہ کیچ واقعتاً قابل دید و توصیف تھا۔دن کے آخری اوور کی پہلی ہی گیند پر اشون نے اسٹوکس کو آؤٹ کر کے انگلستان کی کمر ہی توڑ دی۔اسٹوکس نے پانچ رنز بنائے۔ اس سے قبلروی چندرن اشون، رویندر جڈیجہ اور جینت یادو کی اہم نصف سنچریوں سے ہندوستان نے انگلینڈ کے خلاف تیسرے کرکٹ ٹیسٹ کے تیسرے دن پیر کو اپنی پہلی اننگز میں 134 رن کی اہم برتری حاصل کر لی۔ ہندوستان نے اپنی پہلی اننگز میں 138.2 اوور میں 417 رن کا بڑا اسکور بنایا اور انگلینڈ کے خلاف 134 رن کی برتری حاصل کر لی۔ ہندوستانی اننگز میں نچلی صف کے بلے بازوں نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا اور ساتویں وکٹ کے لیے اشون اور جڈیجہ نے 97 رن اور آٹھویں وکٹ کے لیے جڈیجہ اور جینت نے 80 رن کا اضافہ کر کے ہندوستان کی برتری کو 100 کے پار پہنچا دیا۔ اشون نے 72 رن، جڈیجہ نے 90 رن اور اپنے کیریئر کا دوسرا ٹیسٹ کھیل رہے جینت نے پہلی ٹیسٹ نصف سنچری لگا کر 55 رن کی اننگز کھیلی۔
ہندوستان کے باقی چار بلےبازوں نے 116 رن جوڑے۔ اس سے پہلے ہندوستان نے دن میں اپنی اننگز کا آغاز کل کے 271 رنز پر چھ وکٹ سے آگے بڑھاتے ہوئے کیا۔ اس وقت اشون 57 اور جڈیجہ 31 رن بنا کر کریز پر تھے اور ہندوستان انگلینڈ کے 283 کے اسکور سے محض 12 رن پیچھے تھا۔ اشون اور جڈیجہ نے نچلے آرڈر پر مضبوطی سے ٹک کر رن بناتے ہوئے ساتویں وکٹ کے لیے 97 رن کی اہم شراکت کی اور میزبان ٹیم کو برتری تک لے گئے۔ اشون کا وکٹ لنچ سے پہلے گرا۔ انگلینڈ کو دن کی واحد کامیابی اشون کی شکل میں ملی جنہیں بین اسٹوکس نے جوس بٹلر کے ہاتھوں کیچ کراکر ساتویں بلے باز کے طور پر آؤٹ کیا۔ نمبر ون آل راؤنڈر اشون نے 113 گیندوں کی اننگز میں 11 چوکے لگا کر اپنی آٹھویں ٹیسٹ نصف سنچری بنائی۔
اس کے بعد لنچ تک پھر ہندوستان نے کوئی دوسرے وکٹ نہیں گرنے دیا۔
ہندوستانی ٹیم نے لنچ تک سات وکٹ کے نقصان پر پھر 354 رن بنائے۔ لنچ کے بعد جڈیجہ اور جینت نے اننگز کو آگے بڑھایا اور آٹھویں وکٹ کے لیے 28.2 اوور میں 80 رن جوڑے۔ جڈیجہ نے 170 گیندوں میں 10 چوکے اور ایک چھکا لگا کر 90 رن بنائے جو ان کی تیسری ٹیسٹ نصف سنچری ہے۔ تاہم سوراشٹر کے کھلاڑی اپنے ٹیسٹ کیریئر کی پہلی سنچری سے محض 10 رن دور رہتے ہوئے انگلش اسپنر عادل راشد کی گیند پر کرس ووکس کو کیچ تھما بیٹھے اور ہندوستان کا آٹھواں اہم وکٹ گر گیا۔ لیکن دوسرے سرے پر جینت ٹکے رہے اور انہوں نے 141 گیندوں میں پانچ چوکے لگا کر 55 رن بنائے۔ جینت نویں بلے باز کے طور پر آوٹ ہوئے۔انہیں بین اسٹوکس نے معین علی کے ہاتھوں کیچ کرایا۔ جینت نے امیش کے ساتھ نویں وکٹ کے لیے 33 رن جوڑے۔ امیش نے 42 گیندوں میں ایک چھکا لگا کر 12 رن جوڑے۔ وہ بھی اسٹوکس کا شکار بنے اور بیرسٹو کو کیچ دے کر آخری بلے باز کے طور پر آوٹ ہوئے۔

Read all Latest sports news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from sports and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ashwin treble leaves england in strife in Urdu | In Category: کھیل Sports Urdu News

Leave a Reply