ناسا اور اسرو باہمی اشتراک سے ڈاٹا سیٹلائٹ تیار کر رہی ہیں

نئی دہلی: ہندستانی خلائی تحقیق کی تنظیم ، اسرو اور ناسا کی جیٹ پروپلزن لیباریٹری ( جے پی ایل ) مشترکہ طور پر دوہری فریکوینسی والے ( ایل این ایس بینڈ ) سنتھیٹک اپرچر راڈار ایمیجنگ سیٹلائٹ تیار کرنے کے لئے کام کر رہی ہیں ، جسے ناسا –
اسرو سنتھیٹک اپرچر راڈار ( این آئی ایس اے آر ) کا نام دیا گیا ہے۔ اس مشترکہ مشن میں جے پی ایل ناسا ، ایل – بینڈ ایس اے آر ، 12 میٹر کے اینٹینا اور اِس کو لگانے کے عناصر ، جی پی ایس نظام اور ڈاٹا ریکارڈر تیار کرنے اور ڈیزائن کرنے کی ذمہ دار ہو گی ، جب کہ اسرو ، ایس – بینڈ ایس اے آر ، اسپیس کرافٹ بس ، ڈاٹا کا ترسیلی نظام ، اسپیس کرافٹ کو مربوط کرنا اور ٹسٹنگ ، جی ایس ایس ایل وی کے ذریعے لانچ اور مدار میں آپریشن کے لئے ذمہ دار ہو گا۔
اس سیٹلائٹ سے حاصل ہونے والے ایل اینڈ ایس بینڈ مائکرو ویو ڈاٹا مختلف کاموں کے لئے کارآمد ہوں گے ، جن میں قدرتی وسائل کی پیمائش اور نگرانی ، زرعی بایو ماس ، مٹی میں رطوبت کا تجزیہ ، سیلاب کی نگرانی ، ساحلوں پر مٹی کا کٹاؤ، ساحلی پٹی میں تبدیلی ، ساحلی سمندر میں ہواؤں کے اتار اور چڑھاؤ ، دلدلی علاقوں کا تجزیہ اور زمینی سطح میں آنے والی خرابی جیسے مطالعات شامل ہیں۔
یہ معلومات آج راجیہ سبھا میں شمال مشرقی ریاستوں کی ترقی کے وزیر مملکت ( آزادانہ چارج ) ، وزیر اعظم کے دفتر ، عملہ ، عوامی شکایات اور پینشن ، ایٹمی توانائی اور خلاکے وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے ایک سوال کے تحریری جواب میں فراہم کیں۔(یو این آئی)

Read all Latest science news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from science and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: India us to jointly develop resource mapping satellite for launch in 2021 in Urdu | In Category: سائنس Science Urdu News

Leave a Reply