بے نظیر کے قتل میں میرا ہاتھ نہیں،میرے خلاف فیصلہ سیاسی بنیادوں پر سنایا گیاہے:پرویزمشرف

نئی دہلی: پاکستان کے سابق فوجی حکمراں پرویز مشرف نے کہا ہے کہ انہیں سابق وزیر اعظم بے نظیر بھٹو کے قتل میں پھنسایا گیا ہے لیکن وہ جیسے ہی ان کی صحت اجازت دے گی وہ پاکستان واپس آکر مقدمہ کا سامنا کریں گے۔ پرویز مشرف نے ،جوان پر عائد تین سالہ سفری پابندی پاکستانی سپریم کورٹ کی جانب سے اٹھا لیے جانے کے بعد ریڑھ کی ہڈی کے درد کا علاج کرانے مارچ میں دوبئی چلے گئے تھے، عدالتی فیصلے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ میرے خلاف فیصلہ سیاسی بنیادوں پر سنایا گیا ہے۔ انہوں نے عدالتی فیصلے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ بے نظیر کے قتل سے میرا کوئی تعلق نہیں ہے اور نہ ہی اس قتل سے میرا کوئی مفاد وابستہ ہے۔پرویز مشرف کا مزید کہنا ہے کہ بے نظیر بھٹو قتل کیس پر سنایا جانے والا انسداد دہشت گردی عدالت کا فیصلہ بے بنیاد، جھوٹ اور خود ساختہ ہے جس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے جبکہ اس کیس میں میرے خلاف کوئی ثبوت بھی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ میرا مقدمہ داخل دفتر ہے صحت یابی کے بعد پاکستان آ کر مقدمے کا سامنا کروں گا۔ عدالت کی جانب سے جائیداد ضبط کرنے کے متعلق ان کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے میری قانونی ٹیم جائزہ لے رہی ہے جس کے بعد قانونی چارہ جوئی کی جائے گی۔واضح رہے کہ چند روز قبل انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے بے نظیر بھٹو قتل کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق صدر پرویز مشرف کو اشتہاری قرار ے کر ان کی املاک قرق کرنے کا حکم دیا تھا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Will return for trial in benazir bhutto murder case absconder pervez musharraf in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply