ایرانی وزیر خارجہ اور پاکستانی فوجی سربراہ کا درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے مغربی ایشیا میں تعاون کی ضرور ت پر زور

اسلام آباد:فوجی سربراہ جنرل قمر جاوید باجوا نے، جو پاکستان اور ایران کے تعلقات میں بہتری لانے کی جدوجہد میں لگے رہتے ہیں، پاکستان کے دورے پر آنے والے ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف کے ساتھ تبادلہ خیال کے دوران خطہ کو درپیش سلامتی کے چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے مغربی ایشیا میں تعاون کی ضرورت پر زور دیا۔
فوج کے ابلاغی ذرائع بازو کے مطابق جنرل باجوا نے کہا کہ علاقائی امن کا انحصار مغربی ایشیا کے اندر وسیع تعاون پر ہے۔ہم سب کو مل کر اور باہمی تعاون سے خطہ کو درپیش خطرات سے محفوظ رکھا جا سکتا ہے۔مشرق وسطیٰ کی سیاست میں پاکستان اور ایران مخالف خیموں میں ہیں۔ ماضی میں پاکستان نے سعودی عرب اور قطر اور سعودی عرب اور ایران کےدرمیان ثالثی کی کوشش کی تھی لیکن وہ اپنی مساعی میںکامیاب نہ ہو سکا اور نہ ہی سعودی عرب کو قائل کر سکا کہ وہ اس کی ثالثی کو شرف قبولیت بخشے۔
جنرل باجوا کو ،جنہوں نے گذشتہ سال ایران کا دورہ کیا تھا ،پاکستان ایران کے درمیان تعلقات میں حالیہ بہتری لانے کا کریڈٹ دیا جاتا ہے۔اپنے سہ روزہ دور پاکستان کے دوران مسٹر ظریف پاکستان سے اصرار کرتے رہے کہ وہ خطہ میں کشیدگی دور کرنے میں اپنا کردار ادا کرے اور مفاہمت و شمولیت کا ایک نیا نمونہ پیش کر کے ’مثالی ہمسایہ“ بنے۔

Title: wider cooperation in west asia key to regional peace bajwa tells zarif | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply