نواز شریف کی روانگی سے مشروط یہ ایڈیمنٹی بونڈ آخر کس بلا کا نام ہے

اسلام آباد : پاکستان تحریک انصاف حکومت نے ملک کے سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اور ان کے بھائی و پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این )کے صدر و قومی اسمبلی میں حزب اختلاف کے قائد میاں محمد شہباز شریف سے یہ جو کہا ہے کہ اگر نواز شریف بغرض علاج بیرون ملک جانا چاہتے ہیں تو7ارب روپے کے ایڈمنٹی بونڈ کا پرچہ داخل کریں وہ روانگی سے پہلے بطور زر ضمانت رقم یا اتنی مالیت کی کوئی غیر منقولہ شے کو جمع کرانا نہیں بلکہ سردست خانہ پری ہوتی ہے۔

اگرچہ اس میں چیک دینے،نقد جمع کرنے یا جائیداد وغیرہ رہن رکھنے کا کوئی شرط نہیں ہے صرف تحریری اقرار نامہ ہے لیکن شریف خاندان نے اس شرط کو تسلیم کرنے سے انکار کر دیا ہے۔ ایڈیمنٹی در اصل ہرجانہ یا کسی معاسملہ میں ہونے والئے خسارہ کو پورا کرنے کو کہتے ہیں۔

نواز شریف یا شہباز شریف کو مشروط اجازت دیتے ہوئے حکومت نے جو ایڈمنٹی بانڈ مانگا ہے اس کا مطلب یہ ہے کہ اگر نواز شریف علاج کراکے مقررہ مدت میں (جو کہ قابل توسیع بتائی گئی ہے) وطن واپس نہیں آتے اور کسی ملک میں سیاسی پناہ لے لیتے ہیں تو انہیں بطور ہرجانہ سات ارب روپے ادا کرنا ہوں گے اور حکومت اس کی وصولی کے لیے عدالت کا دروازہ کھٹکھٹا سکتی ہے۔

اس میں کسی قسم کا چیک،جائیداد کے کاغذات یا گھر بنگلہ کھیت کھلیان کچھ بھی گروی نہیں رکھاجاتا صرف ایک اسٹامپ پیپر پر قول و قرار کر لیا جاتا ہے ۔اور اس کی پاسداری کرنا ہوتا ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: What is indemnity bond in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.