نواز شریف کی پی ایم ایل این کی جانب سے کسی بھی لمحہ سپریم کورٹ پر حملہ ہو سکتاہے: عمران خان

اسلام آباد: پنامہ گیٹ کیس میں مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کی چوتھی اور آخری رپورٹ پیش کیے جانے سے عین قبل حکمراں و حزب اختلاف کے درمیان زبانی جنگ نے اتنی شدت اختیار کر لی ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے یہاں تک کہہ دیا کہ صورتت حال ملک کو 1997کے اس دور کی طرف لے جارہی ہے جب سپریم کورٹ کواپنی باندی بنا لیا گیا تھا۔ انہوں نے بنی گالہ میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے پاکستانی عوام کو احتجاجی مظاہروں کے لئے تیار رہنے کی ہدایت دیتے ہوئے کہا ہے کہ نون لیگ کی جانب سے کسی بھی وقت سپریم کورٹ پر حملہ ہو سکتا ہے لہٰذا عوام کو تیار رہنا چاہئے۔ ان کا کہنا ہے کہ نون لیگ پانامہ کیس پر سپریم کورٹ کے فیصلے کو قبول نہیں کرے گی جس کا اشارہ لیگی وزراءنے اپنے بیان میں دے دیا ہے۔
عمران خان کا مزید کہنا ہے کہ نون لیگ کو اب اس بات کا اندازہ ہو گیا ہے کہ جے آئی ٹی کی تحقیقات کے بعد وزیراعظم نے حتمی طور پر نااہل ہونا ہے جس کی وجہ سے وہ لوگ رپورٹ تسلیم نہ کرنے کی باتیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ اور فوج کے علاوہ تمام ادارے نون لیگ کے کنٹرول میں ہیں جبکہ ان کی جانب سے ان دو مقدس قومی اداروں پر سازش کا الزام لگایا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ جے آئی ٹی فیصلہ کرنے کی جاز نہیں ہے وہ تو صرف اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔ اور جے آئی ٹی کی تحقیقات اور اس کے اخذکردہ نتائج کومدنظر رکھ کر ہی سپریم کورٹ اپنا فیصلہ سنائے گی۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: War of words intensifies on eve of jit report in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply