عمران خان، شہباز شریف اور بلاول میں سے کون بنے گا وزیر اعظم، پاکستان میں پولنگ شروع

اسلام آباد: پاکستان میں قومی و صوبائی اسمبلیوں کی 849سیٹوں میں سے840کے لیے پولنگ عمل شروع ہو گیا۔ قبل از انتخابات انتخابی تشدد، خود کش دھماکوں ، اندھادھند فائرنگ اور کئی امیدواروںسمیت سیکڑوں افراد کی ہلاکتوں کی پروا کیے بغیرساڑھے دس کروڑ رائے دہندگان نے بڑے جوش و خروش کے ساتھ ملک کی تین اہم اور بڑی پارٹیوں پاکستان مسلم لیگ(پی ایم ایل این)، پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) اور پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی ) کے سربراہوں کی قسمت کا فیصلہ کرنے کے لیے صبح ساڑھے سات بجے سے ہی جوق در جوق پولنگ بوتھوں کی جانب روانہ ہونا شروع کر دیا ۔

حسب پروگرام صبح 8بجے سے پولنگ شروع ہو گئی اور جیسے ہی پولنگ شروع ہوئی پی ایم ایل این کے صدر شہباز شریف نے مشرقی لاہور واقع اپنے پولنگ بوتھ پر ووٹ ڈالا تاکہ انہیں پورے لاہور میں اپنی پارٹی کے امیدواروں کے حق میں ووٹ مانگنے کے لیے بوتھ بوتھ گھومتے پھرنے کے لیے وقت مل سکے۔

مشرقی لاہور کے ایک پولنگ بوتھ پرسے پہلا ووٹ مریم عارف نام کی ایک خاتون بزنس ایکزیکٹیو نے ڈالا ۔معلوم کیے انے پر انہوں نے کہا کہ انہوں نے مسلم لیگ پاکستان کو ووٹ کیا ہے کیونکہ اس پارٹی نے پاکستان کے لیے بہت قربانیاں دی ہیں اور بہت کچھ کیا ہے۔مجموعی اعتبار سے دیکھا جائے تو پاکستان میں اصل مقابلہ شہباز شریف کی پی ایم ایل این اور عمران خان کی پی ٹی آئی کے درمیان ہے اور بلاول بھٹو زرداری کی قیادت والی پی پی پی کو شایدکانسہ کے تمغہ پر ہی اکتفا کرنا پڑے ۔

بوڑھے اور دیگر عمر رسیدہ ووٹروں میں جو دو یا دو سے زائد بار عام انتخابات میں ووٹ ڈال چکے ہیں ایک عام خیال یہ بھی پایا جاتا ہے کہ انہوںنے عصر حاضر میں اب تک بے نظیر کی قیادت میں پی پی پی اور نواز شریف کی قیادت میں پی ایم ایل این کو آزمایا ہے تو کیوں نہ ایک بار پی ٹی آئی کو آزمانے کے لیے عمران خان کو ہی وزارت عظمیٰ پر فائز کر ادیا جائے۔ نئے ووٹروں میں کرکٹ اور شخصیت پرستی کا رجحان بہت زیادہ ہے اور ان کا یہی رجحان عمران خان کے حق میں ووٹ کرتا نظر آرہا ہے ۔

علاوہ ازیں وسیم اکرم سمیت کئی کرکٹرز نے عمران خان کی قصیدہ خوانی کر کے ان کے حق میں فضا اور ہموار کر دی۔ جبکہ دوسری طرف پی ایم ایل این اپنے سابق سربراہ میاں محمد نواز شریف اور ان کی بیٹی مریم نواز کو جیل میں ڈال دیے جانے کے باعث ہمدردی سمیٹے ہوئے ہے اور کلثوم نواز کی علالت اور ان کا اسپتال میں داخل رہنا سونے پہ سہاگے کا کام کر رہا ہے۔اس لیے بھی مقابلہ دو طرفہ ہی لگ رہا ہے۔واضح ہو کہ قومی اسمبلی کی272میں سے270اور صوبائی اسمبلیوں کے لیے 577میں سے570سیٹوں کے لیے پولنگ ہو رہی ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Voting begins in pakistans general election in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply