بزرگ سندھی سیاست داں جام ساقی انتقال کر گئے

اسلام آباد: بزرگ سندھی سیاست داں اور حقوق انسانی کے علمبردار جان ساقی کا پیر کے روز حیدر آباد سندھ میں انتقال ہو گیا۔ مرحوم کے کنبہ کے ذرائع کے مطابق جام ساقی مختلف امراض میں مبتلا تھے لیکن ان کی موت گردوں کے کام بند کردینے کے باعث ہوئی۔
ساقی، جو 31اکتوبر1944کو پیدا ہوئے ،سندھ سے بائیں بازو کے سیاستداں تھے۔وہ کٹر کمیونسٹ تھے اور کمیونسٹ پارٹی آف پاکستان کے جنرل سکریٹری تھے۔ساقی کو جنرل ضیاءالحق کے دور میں 1978میں گرفتار کیا گیا تھا اور80کے عشرے میں انہیں فوجی عدالت کے روبرو پیش کیا گیا۔ان پر مقدمہ چل ہی رہا تھا کہ بے نظیر بھٹو ساقی کے حق میں بطور گواہ پیش ہوئیں اور حلفیہ بیان دیا کہ جام ساقی ایک محب وطن پاکستانی ہے اس لیے اسے رہا کردیا جانا چاہیے۔
وہ1988تک جیل میں رہے ۔ ان کی پہلی بیوی نے یہ سنتے ہی کہ ان کے شوہر کو قید تنہائی مین اذیتیں پہنچائی جا رہی ہیں ، خود کشی کر لی۔وہ90کے عشرے میں پی پی پی میں شامل ہو گئے ۔وہ پاکستان کے ہیومن رائٹس کمیشن کے کونسل ممبر بھی رہ چکے ہیں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: veteran sindhi politician jam saqi passes away in hyderabad in Urdu | In Category: پاکستان  ( pakistan ) Urdu News

Leave a Reply