پاکستان میں بھگت سنگھ قومی ہیرو قرار دینے کا مطالبہ

لاہور: مجاہد آزادی بھگت سنگھ کی 87ویں برسی یہاں دو گروپوں نے بڑے جوش و خروش سے منائی اور انہیں پاکستان کا ’قومی ہیرو‘ قرار دینے کا مطالبہ کیا۔سنگھ کو 23مارچ1931کو 23سال ،ی عمر میں راج گورو اور سکھدیو کے ساتھ پھانسی دی گئی تھی۔
بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن اور بھگت سنگھ فاؤنڈیشن آف پاکستان نے شادمان چوک پر جہاں بھگت سنگھ کو پھانسی دی گئی تھی علیحدہ تقریبات منعقد کیں۔شرکاءنے ان تینوں شہیدوں کو زبردست خراج عقیدت پیش کیا۔ تقریب سے بھگت سنگھ کے کچھ رشتہ داروں نے ٹیلی فونی خطاب کیا۔
بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن کے چیرمین امتیاز رشید نے ایک قرار داد پیش کی جس میں مطالبہ کیا گیا کہ ملکہ برطانیہ ان تینوں مجاہدین آزادی کو پھانسی دینے پر معافی مانگیں اور ان کے لواحقین کو معاوضہ دیں۔
انہوں نے کسی سڑک کو ان سے موسوم کرنے ،سکولی نصاب میں ان کے نام سے ایک باب کا اضافہ کرنے، ڈاک ٹکت جاری کرنے اور شادمان چوک پر بھگت سنگھ کا مجسمہ نصب کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔ واضح رہے کہ ان کو پھانسی دیے جانے سے نوجوان نسل میں ایک جوش و ولولہ پیدا ہو گیاتھا اور ہزاروں نوجوانوں نے تحریک آزادی میں شدت پیدا کر دی تھی۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Two groups in pakistan want bhagat singh to be declared a national hero in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply