گلگت بلتستان میں اسکولوں کو نذر آتش کرنے کا اصل ملزم مارا گیا:پولس کا دعویٰ

دیامر(گلگت بلتستان):دیامر پولس کے ترجمان محمد وکیل کے مطابق دیامر ضلع میں گذشتہ دو روز کے دوران لڑکیوں کے14اسکولوں کو نذر آتش کرنے کی واردات کا اصل ملزم اتوار کے روز تلاش مہم کے دوران تانگیڑ علاقہ میں پولس کی گولی سے مارا گیا۔

اس کی شناخت شفیق کے طور کی گئی ہے۔اگرچہ اس کا تعلق کسی انتہاپسند تنظیم یا دہشت گردگروپ سے نہیں ہے لیکن پولس نے اسے ایک انتہا پسند اور ملی ٹینٹ کمانڈر کے طور پر بتاتے ہوئے اس چیلاس، داریل اور تانگیڑ کے اسکولوں کو آگ لگانے کے واقعات کا کلیدی ملزم قرار دیا ہے۔

پولس نے ہفتہ کی عرات سے ہی ملزموں کی تلاش شروع کر کے دیامر میں کئی مقامات پر چھاپے مارے تھے۔گلگت بلتستان پولس کے ترجمان فیض اللہ فراق نے بتایا کہ اس تلاش مہم میں 10،12پولس پارٹیاں مقرر کی گئی تھیں۔

فراق نے بتایا کہ ہفتہ کی شب تانگیڑ میں تلاش مہم کے دوران مسلح انتہاپسندوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلہ میں ایک پولس کانسٹبل ہلاک اور ایک دیگر زخمی ہو گیا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: suspect behind torching of diamer schools killed in search operation police in Urdu | In Category: پاکستان  ( pakistan ) Urdu News

Leave a Reply