جماعت الدعویٰ اور جیش محمد کو حکومت کی پشت پناہی حاصل رہی ہے:رانا ثناءاللہ

لاہور: پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناءاللہ نے کہا ہے کہ جماعت الدعویٰ اور جیش محمد جیسی کالعدم تنظیموں کے خلاف قانونی کارروائی کیسے ممکن ہے جب خود حکومت اس کا ایک جزو رہی ہے میں شامل رہی ہو۔
بی بی سی اردو کو ایک انٹرویو میں ثناءاللہ نے کہا کہ لیکن اب یہ تنظیمیں کالعدم قرار دی جاچکی ہیں۔ تاہم انہوں نے کہاکہ کوئی کیسے قانونی کارروائی کر سکتا تھا جب خود حکومت ہی اس معاملہ میں آڑے آرہی ہو۔مگر انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ نواز کے خلاف یہ الزام بے بنیاد ہے کہ وہ پنجاب میں دہشت گردی سے صرف نظر کرر ہی ہے۔
پنجاب کے وزیر قانون کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ ضرب عضب کے بعد ہماری فوجی و سیاسی قیادت اس پر متفق تھی کہ کسی کو بھی پڑوسی ملک کے خلاف سرزمین پاکستان کو استعمال نہیں کرنے دیا جائے گا۔
ایسی کوئی بھی دہشت گردانہ سرگرمی جو کسی کی مدد کرنے کے لیے کی جائے یا جس سے کسی کے حق خود مختاری پر ضرب لگتی ہو پاکستان کے لیے ناقابل برداشت ہو گا۔ جنوبی پنجاب کے دہشت گردی سے تعلق کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں ثناءاللہ نے کہا کہ پورا ملک انتہا پسندی کی گرفت میں ہے اور یہ کہنا کہ جنوبی پنجاب انتہا پسندی کا گڑھ یا منبع ہے قطعاً غلط ہے۔
انہوں نے کہا پی پی پی کے دور حکومت میں محض سیاسی فائدوں کے لیےاس خطہ کو سابق وزیر داخلہ رحمٰن ملک نے دہشت گردی سے جوڑا تھا۔

Title: state responsible for inaction against jamaatud dawa jaish i mohammad sanaullah | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply