مشرف غداری کیس کی سماعت یومیہ بنیاد پر ہوگی، ہم ہائی کورٹ کے فیصلہ کے پابند نہیں:خصوصی عدالت

اسلام آباد: یہاں کی ایک خصوصی عدالت نے، جسے سابق صدر پاکستان ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف کے خلاف طویل عرصہ سے جاری سنگین غداری کیس میں اپنا فیصلہ سنانے سے روک دیا گیا تھا، سابق حکمراں کے مقرر کردہ وکیل رضا بشیر کے ذریعہ تحریری جواب داخل نہ کرنے پر اظہار نا خوشگواری کیا۔

واضح ہوکہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے خصوصی عدالت کو وزارت داخلہ کی جانب سے دائر کی گئی ایک پٹیشن پر مشرف کے خلاف سنگین غداری مقدمہ میں اپنا فیصلہ سنانے سے روک دیا تھا۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ کی سربراہی میں ایک تین ججی بنچ نے معاملہ کی سماعت شروع کی تو ایڈوکیٹ بشیر عدالت میں حاضر ہوئے اور بنچ کو مطلع کیا کہ انہوں نے مشرف کے بریت کے لیے ایک درخواست داخل کی ہے۔

وزارت داخلہ کا بھی ایک نمائندہ عدالت میں موجود تھا۔جسٹس سیٹھ نے نمائندہ سے کہا کہ ہائی کورٹ نے حکومت کواستغاثہ کی ایک ٹیم مقرر کرنے کے لیے 5دسمبر تک مہلت دی ہے۔انہوںنے کہا کہ 5دسمبر کے بعدمزید مہلت نہیں دی جائے گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ اس تاریخ کے بعد سے معاملہ کی یومیہ سماعت ہوگی ۔جج نے کہا کہ مشرف آئندہ سماعت سے پہلے جب چاہیں اپنا بیان قلمبند کرا سکتے ہیں ۔لیکن سماعت کے بعد پھر کوئی درخواست منظور نہیں کی جائے گی۔

جسٹس شاہد کریم نے کہا کہ ہم ہائی کورٹ کے فیصلے کے پابند نہیں ہیں۔ہم صرف سپریم کورٹ کے احکام کے پابند ہیں۔ جسٹس سیٹھ نے مزید کہا کہ ہم ہائی کورٹ کے فیصلہ پر تبصرہ نہیں کریں گے۔نیز اب اس معاملہ کی سماعت یومیہ بنیاد پر ہو گی۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Special court to hear high treason case against musharraf on daily basis from dec 5 in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.