ایبٹ آباد میں جرگہ کے حکم پر 16سالہ لڑکی کوہلاک کرکے جلادیا گیا

 ایبٹ آباد: پاکستان کے ایبٹ آباد میں گلیات کے گاؤں مکول میں جرگہ کے حکم پر ایک 16لڑکی کو گلا دبا کر ہلاک کرنے کے بعد اس کی لاش کو جلا دیا گیا۔پولس نے بتایا کہ گذشتہ ہفتہ ہوئے اس قتل کی واردات کا تحقیقات کے بعد پتہ چلا کہ مکول ،گاؤں کے کونسلر پرویز نے ایک15رکنی جرگہ بلایا جس نے حکم جاری کیا کہ عنبر کو اپنی سہیلی کو اپنی مرضی سے شادی کرنے کے لیے گاؤں سے نکالنے میں معاونت کرنے کے جرم میں سزا کے طور پر ہلاک کر دیا جائے اور لاش کو جلا دیا جائے۔
پولس نے بتایا کہ اس معاملہ میں13افراد کو گرفتار کر لیا گیا جنہیں بشمول متوفیہ کی ماںایک انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا جائے گا ۔28اپریل کو چھ گھنٹے کی کارروائی کے بعد جرگہ ختم ہوا تو اس لرکی کو اس کے گھر سے نکال کر ایک لاوارث مکان لے جایا گیا ۔ جہاں اسے بری طرح زدو کوب کیا گیا اور پھر جان سے ماڑ ڈال گیا۔ اسے مردہ حالت میں ایک کھڑی وین میں ڈال کر اس وین میں آگ لگادی گئی۔
اس لڑکی کی مسخ شدہ لاش جلی جمعہ کو ڈونگا گلی میں کھڑی سوزوکی وین میں پائی گئی۔پولس نے اس لاوارث مکان سے منشیات اور وین کو آگ لگانے کے لیے استعمال کیا گیا پیٹرول کا کین برآمد کر لیا۔

Title: sixteen year old girl set on fire as punishment by abbottabad jirga | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply