ممتاز قادری کو پھانسی دینے کے خلاف دھرنا جاری، قادری کو شہید قرارر دینے کا مطالبہ

اسلام آباد:پنجاب کے گورنر سلمان تاثیر کے قتل کے جرم میں ممتاز قادری کو پھانسی دیے جانے کے خلاف احتجاج میں قادری کے چہلم کے موقع پر ہزاروں افراد کا دھرنا دوسرے روز پیر کو بھی جاری رہا۔تاہم اتوار کی شام میں جمع ہونے ولا دس ہزار کا یہ مجمع پیر کی صبح ہونے تک گھٹ کر دوہزار رہ گیا ۔
اس دوران قومی دارالخلافہ کے ریڈ زون کی حدود میں واقع ڈی چوک پر دھرنے پر بیٹھے لوگوں سے مذہبی علماءنے خطاب کیا۔ قادری کے چہلم میں شرکت کے لیے سنی تحریک (ایس ٹی) اور تحریک لبیک یا رسول(ایس اے ڈبلیو) کی قیادت میں احتجاجیوں کی ایک کثیر تعداد اتوار کی شام کو ڈی چوک پہنچ گئی ۔جہاں دھرنے کے دوران حکومت کو ایک میمورنڈم دیا گیا جس میں کہاگیا کہ جب تک حکومت ملک میں نفاذ شریعت اور ممتاز قادری کو شہید قرار دینے سمیت ان کے تمام مطالبات تسلیم نہیں کر لیتی ریڈ زون میں احتجاجی خیمہ زن رہیں گے۔
10مطالبات پر مشتمل یہ میمورنڈم تحریک لبیک یا رسول کے پرچم تلے جاری کیا گیا ہے جس میں دہشت گردی اور قتل سمیت مختلف الزامات میں گرفتار تمام سنی علماءو رہنماو¿ں کی غیر مشروط رہائی، ممتاز قادری کو شہدی کا درجہ دینے،اور اڈیلہ جیل کی اس کوٹھری کو جس میں ممتاز قادری کو رکھا گیا تھا قومی ورثہ قرار دینے،توہین رسالت قانون میں ترمیم نہ کرنے کی یقین دہانی کرانے اور کلیدی عہدوں پر فائز احمدیوں اور غیر مسلموں کو معزول کرنے کے مطالبات بھی شامل ہیں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Qadri protesters continue sit in islamabad in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply