سات سالہ زینب سے ریپ اور پھر قتل کرنے والا نوجوان گرفتار

لاہور: قصور میں پولس نے دعویٰ کیا ہے کہ اس نے سات سالہ بچی زینب سے جنسی زیادتی کرنے اور اسے قتل کرنے کی ہولناک واردات انجام دینے والے شخص کو گرفتار کر لیا ہے۔
زینب کو قصور میں 4جنوری کو اس وقت اسکی خالہ کے گھر کے قریب سے اغوا کر لای گیا تھا جب وہ باہر کھیل رہی تھی۔پانچ روز بعد اس کی پاش کوڑے کے ایک ڈھیر پر پڑی پائی گئی۔پوسٹمارٹم سے یہ انکشاف ہوا کہ قتل سے پہلے اس سے ریپ کیا گیا تھا۔
عمران نام کے جس 24سالہ لڑکے کو گرفتار کیا گیا وہ زینب کا رشتہ دار تھا اور اس کے گھر آتا جاتا رہتا تھا اور وہ بچی اس سے بہت مانوس تھی۔ لیکن زینب کے والد کا کہنا ہے کہ عمران انکا رشتہ در نہیں ہے۔عمران کو گرفتار کرنے کے بعد اس لیے چھوڑ دیا گیا تھا کیونکہ سی سی ٹی وی کیمرے کی زد میں جو شخص آرہا تھا وہ ڈاڑھی والا تھا اور عمران کے ڈاڑھی نہیں تھی۔ اور اس کے بعد کئی لڑکوں کو گرفتار کر کے ان کا ڈی این اے ٹیسٹ کرایا گیا لیکن کسی کے ڈی این اے سے زینب کے ڈی این اے نے میل نہیں کھایا۔
عمران رہا کیے جاتے ہی قصور سے بھاگ گیا تھا۔جس کے باعث پولس نے پھر اسے تلاش کیا اور آخر کار پاک پٹن میں پکڑا گیا ۔اس سے علم ہواکہ اس نے واردات انجام دینے کے بعد ڈاڑھی صاف کر دی تھی۔اس کا بھی ڈی این اے کرایا گیا ہے لیکن ابھی رپورٹ نہیں آئی ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Police claim to arrest zainabs killer say suspect admitted crime in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply