پاک سرزمین پاکستان کے سربراہ مصطفےٰ کمال سمیت 11 کے خلاف حکومتی کام کاج میں مداخلت کا مقدمہ درج

اسلام آباد: پاک سرزمین پاکستان (پی ایس پی) کے سربراہ مصطفی کمال اور انیس قائم خانی سمیت پارٹی کے گیارہ اہم رہنماوں کے خلاف سرکاری کام میں رکاوٹ ڈالنے کا مقدمہ درج کر لیا گیا۔ذرائع کے مطابق ان لیڈروں پر الزام ہے کہ انہوں نے اتوار کے روز کراچی میں ایک ریلی کے دوران امن و قانون کے ساتھ کھلواڑ کی تھی۔ پی ایس پی رہنماوں کے خلاف یہ کیس صدر تھانے میں درج کرایاگیا ہے۔ مقدمے میں پی ایس پی چئیرمین مصطفیٰ کمال، انیس قائم خانی، اشفاق منگی، رضا ہارون، آفاق احمد اور انیس ایڈووکیٹ سمیت گیارہ رہنماؤں کو نامزد کیا گیا ہے۔
پی ایس پی رہنماوں کے خلاف درج مقدمے میں ہنگامہ آرائی، راستہ روکنے اور پولیس مقابلے کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔ پولیس حکام کا کہنا ہے کہ قانون کی بالادستی اور شہر میں قیام امن کی بحالی کے لئے ہنگامہ آرائی و تشدد اور قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کو ضرور سزا دی جائے گی۔واضح رہے کہ پاک سرزمین پارٹی کی جانب سے کراچی کے مسائل کے لئے 14مئی کو ملین مارچ کی کال دی گئی تھی جسے پولیس نے شارع فیصل پر روک کر پارٹی رہنماؤں سمیت مختلف کارکنوں کو حراست میں لے لیا تھا تاہم انہیں کچھ دیر بعد رہا کر دیا گیا تھا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Police booked kamalothers for unrest during rally in karachi in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
Tags: , ,

Leave a Reply