پی ایم ایل این نے مولانا فضل کے آزادی مارچ میں شرکت کا حتمی فیصلہ نواز شریف پر چھوڑ دیا

لاہور: پاکستان مسلم لیگ نواز (پی ایم ایل این) کے عہدیداران بالا ابھی تک اس امر پر اتفاق رائے قائم نہیں کر سکے کہ پارٹی کو مولانا فضل الرحمٰن کی تنظیم جمیعت علمائے اسلام فضل(جے یو آئی ایف ) کے مجوزہ آزادی مارچ میں، جس کی تاریخ میں چار روز کی توسیع کر کے27سے 31اکتوبر کر دیا گیا ہے، شامل ہونا چاہئے یا نہیں۔

تاہم پارٹی لیڈروں نے ہم آہنگ ہو کر یہ کہا کہ سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف اس ضمن میں جو بھی فیصلہ لیں گے اس پر عمل کیا جائے گا۔

ماڈل ٹاؤن میں گذشتہ روز پی ایم ایل این کے صدر و قومی اسمبلی میں حزب اختلاف کے قائد میاں محمد شہباز شریف کی زیر صدارت پانچ گھنٹے تک چلنے والے اجلاس میںراجا ظفر الحق، خواجہ آصف، رانا تنویر حسین،مریم اورنگ زیب، پرویز رشید ، سردار ایاز صادق، مرتضیٰ جاوید عباسی، ریٹائرڈ جنرل عبد القادر بلوچ، محمد زبیر، حنیف عباسی اور پرویز ملک نے شرکت کی۔

پارٹی کے اندرونی ذرائع نے میٹنگ کے بعد ڈان نیوز کو بتایا کہ قومی اسمبلی میں حزب اختلاف کے قائد شہباز شریف بالکل خاموش رہے اور ان کے دماغ میں کیا چل رہا ہے کسی کو معلوم نہیں ہو سکا۔وہ اس معاملہ پر پارٹی کے دیگر لیڈروں کے ہی خیالات معلوم کرتے رہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pml ns model town huddle indecisive leaders leave it to nawaz to have final word on joining fazls march in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.