عمران خان نے کشمیر میں ہندوستانی اقدام سے ملیشیا اور ترکی کو آگاہ کیا

اسلام آباد: پاکستان نے ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر کو خصوصی درجہ دینے والی دفعہ370ختم کرنے کے ہندوستانی اقدام کے خلاف عالمی رائے عامہ ہموار کرنے کے لیے مختلف ممالک کے سربراہوں سے رابطہ قائم کرنا شروع کر دیا ۔

اس ضمن میں وزیر اعظم عمران خان نے پاکستان کے دو حلیفوں ملیشیا اور ترکی کے سربراہوں سے ٹیلی فونی گفتگو کر کے ہندستانی اقدام کو غیر قانونی بتاتے ہوئے کہا کہ دفعہ370کے خاتمہ سے علاقائی امن و سلامتی غارت ہوجائے گی۔

وزیر اعظم عمران خان نے یہ بات اپنے ملیشیائی ہم منصب معاثر بن محمد سے جمون و کشمیر کی صورت حال پر بات کرتے ہوئے کہی۔

دوران گفتگو وزیر اعظم نے مقبوضہ کشمیر کو حاصل خصوصی درجہ قلم زد کردینے کو اقوام متحدہ کی قرار دادوں کی خلاف ورزی سے تعبیر کیا۔انہوںنے کہا کہ ہندوستان کے اس اقدام سے ایٹمی صلاحیتوں کے حامل دو ممالک کے درمیان رشتے اور تعلقات زی بار پھر خراب ہو جائیں گے۔

ملیشیا کے وزئیر اعظم نے جواباً کہا کہ ملیشیا مقبوضہ کشمیر کے حالات کا غائر مطالعہ کر رہا ہے اور اس حوالے سے وہ پاکستان سے رابطہ میں رہے گا۔ترکی کے صدر رجب طیب اردوغان سے بھی عمان خان نے بات کی۔

اور ان سے کہا کہ ہندوستان کشمیر کے خصوصی درجہ کو ختم کرنے کے غیر قانونی اقدامات کر رہا ہے اور یہ کہ اس اقدام سے علاقائی امن و سلامتی پر نہایت مضر اثرات مرتب ہوں گے۔جواب میں اروغان نے مقبوضہ کشمیر میں بگڑتی صورت حال پر شدید تشویش کا اظہار کیا۔اور وزیراعظم کو یقین دہانی کرائی کہ کشمیر کے معاملہ پر ترکی پاکستان کی حمایت کرتا رہے گا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pm imran phones erdogan mahathir says indias move in occupied kashmir will destroy regional peace in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.