پاکستان کاروس کے زیر اہتمام افغان امن مذاکرات میں امریکہ کی شرکت پر زور

اسلام آباد:وزیر اعظم نواز شریف کے مشیر برائے امور خارجہ طارق فاطمی نے کہا ہے ماسکو میں روس کے زیر اہتمام ہونے والے افغانستان امن مذاکرات میں یہ کہتے ہوئے امریکہ کی شرکت پر زور دیا ہے کہ امریکہ نے افغانستان میں سب سے زیادہ سرمایہ لگا رکھا ہے اور اس لحاظ سے وہ سب سے بڑا فریق ہے ۔انہوں نے امن مذاکرات کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ پاک افغانستان امن مذاکرات کی کامیابی کے لیے امریکہ کا شامل ہونا بہت ضروری ہے۔
یہ معلوم کیے جانے پر کہ ان مذاکرات کا کوئی نتیجہ بھی نکلے گا انہوں نے کہا کہ اس بات کا انحصار بھی امریکہ کی ماسکو مذاکرات میں شرکت پر ہے کیونکہ امریکہ کی فوج افغانستان میں موجود ہے ۔ ایک ٹریلین ڈالر امریکہ نے افغانستان میں سرمایہ کاری کی ہوئی ہے۔ سینکڑوں امریکی فوجی افغان جنگ میں مارے جا چکے ہیں اور امریکہ افغانستان میں بہت زیادہ مفادات رکھتا ہے۔طارق فاطمی نے مزید کہا کہ اگر امریکہ نے ان مذاکرات میں شرکت نہ کی تو ان مذاکرات کا کوئی نتیجہ نہیں نکلے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور روس امن مذاکرات میں شرکت کے لیے طالبان کو ترغیب دلا رہے ہیں ۔روس اس معاملے میں مثبت کام کر رہا ہے اور ہم روس کی بھر پور حمایت کر رہے ہیں۔
طارق فاطمی نے مزید کہا کہ روس نے ہم سے کہا ہے کہ روس افغانستان میں داعش کی موجودگی سے پریشان ہے کیونکہ اگر داعش افغانستان میں اپنے قدم جمانے میں کامیاب ہو جاتا ہے تو یہ روس کی سلامتی کے لیے انتہائی خطرناک ہو گا۔ذرائع کے مطابق14 اپریل کو ماسکو میں پاک افغانستان امن مذاکرات منعقد ہو رہے ہیں۔اس سے پہلے روس نے بھی مذاکرات میں امریکہ کی شرکت پر اصرار کیا تھا لیکن امریکہ نے مذاکرات میں شرکت سے انکار کر دیا ہے۔

Title: pakistan us participation a must in russia initiated afghan talks | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply