پاکستان افغانستان میں موجودداعش کے خطرے سے نمٹنے کے لیے ضروری اقدامات کرے گا: نفیس زکریا

اسلام آباد: پاکستان نے کہا ہے کہ وہ افغانستان میں داعش کی موجودگی سے پاکستان کو درپیش خطرے سے نمٹنے کے لیے تمام ضروری اقدامات کرے گا۔ اس ضمن میںخارجہ ترجماننفیس زکریا نے ہفتہ روزہ پریس کانفرنس میں کہا کہ اگر پاکستان اور افغانستان میں امن قائم کرنا ہے تو پاک افغان سرحد پر بندوبست نیز دیگرانتظامی معاملات میں بہتری لانا ہوگی۔ زکریا نے افغانستان میں دہشت گردانہ حملوں میں ہلاکتوں پر اظہار تشویش کرتے ہوئے شدید مذمت بھی کی۔ ان کا کہنا تھا کہ افغانستان میں امن کا قیام پاکستان کے لیے بہت ضروری ہے۔ لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ افغانستان میں داعش جڑیں پکڑ رہی ہے۔ انہوں نے تاکید کرتے ہوئے کہا: ہم پاکستان میں داعش کے تمام راستے بند کر دیں گے نیز اسی سلسلے میں پاک افغان سرحد پر باڑ کا کام جاری ہے۔
وزارت خارجہ کے ترجمان نفیس زکریا نے کہا ہے کہ افغانستان میں امن و امان قائم کرنے کی خاطر ہم ہر عمل شریک رہے ہیں اور آئندہ بھی شریک رہیں گے۔ انہوں نے دہشت گردی کی مذمت کرتے ہوئے کہا: دہشت گردی کی ہر صورت قابل مذمت ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ افغانستان عدم استحکام کی بنا پر داعش کو وہاں مضبوط ہونے کا موقع مل رہا ہے جوکہ پاکستان کے انتہائی تشویش ناک ہے۔یاد رہے کہ عراق اور شام میں داعش کو شرمناک شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ جس کے بعد اب وہ دیگر خطوں کے علاوہ افغانستان میں بھی خود کو مضبوط کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ داعش نے افغانستان میں اپنے گروہ کا نام دولت خراسان رکھ لیا ہے۔ اس نام سے ان کے ناپاک عزائم واضح ہوتے ہیں کہ وہ پاکستان، افغانستان اور ایران کے بعض خطوں پر قبضہ جما کر غاصبانہ حکومت قائم کرنا چاہتے ہیں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pakistan to take measures over isis presence in afghanistan in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply