ہندوستان میں گرفتار 5 پاکستانی ہندو شہریوں تک قونصلر رسائی کی درخواست ہنوز بے اثر: پاکستانی ہائی کمیشن

اسلام آباد: پاکستان و ہندوستان کے درمیان حالیہ کشیدگی سے پاکستان کے ان ہندو شہریوں کی، جنہیں ہندوستان میں گرفتار کر لیا گیا ہے، بڑھتی پریشانیوں سے پاکستان کو زبردست تشویش لاحق ہے۔ پاکستانی حکومت کا کہنا ہے کہ وہ اپنے بے قصورہندو شہریوں کی رہائی کے لیے ہندوستان سے مسلسل رابطے میں ہے لیکن نئی دہلی حکومت بالکل تعاون نہیں کررہی۔جبکہ پاکستان اور ہندوستان کے درمیان ایک دوسرے کی جیلوں میں قید عام شہریوں تک قونصلر رسائی کا باقاعدہ معاہدہ ہے جس کے تحت دونوں ممالک سال میں دو مرتبہ اپنی اپنی جیلوں میں قیدیوں کی فہرستوں کا تبادلہ کرتے ہیں۔ اس حوالے سے پاکستانی ہائی کمیشن کے مطابق ہندوستان میں گرفتار 5 پاکستانی ہندو شہریوں تک قونصلر کی رسائی کا مطالبہ کے جواب میں تاحال ہندوستانی حکام نے کسی قسم کے تعاون کا مظاہرہ نہیں کیا ہے۔
ذرائع ابلاغ کے مطابق دو بچوں سمیت 5 افراد پر مشتمل پاکستانی ہندو خاندان گزشتہ ماہ اپنے رشتہ داروں سے ملنے کیلئے ہندوستانی ریاست راجستھان گیا تھا۔ جہاں 5 جون کو انہیں راجستھانی پولیس نے باڑ میر کے علاقے میں گرفتار کرلیا۔جبکہ ان کے پاس جائز قانونی سفری دستاویزات تھے۔ جس کے بعد پاکستانی ہائی کمشنر متعین ہندوستان کی جانب سے فوری طور پر 7 جون کو ایک مکتوب ارسال کر کے گرفتار ہندو خاندان تک قونصلر رسائی کا مطالبہ کیا گیا تھا لیکن ہندوستانی حکام کی جانب سے اس مکتوب کا ہنوز کوئی جواب نہیں دیا گیا جس پر پاکستانی ہائی کمیشن نے ہندوستانی وزارت خارجہ کو ایک اور مکتوب ارسال کر کے قونصلر رسائی کا مطالبہ کیا ہے۔حکام نے بتایا ہے کہ گرفتار شدگان میں 60 سالہ کھوجو بہل، 10 سالہ نریش بہل، 12 سالہ دھرمی بائی، 75 سالہ چندو بہل اور اسکی بیوی 70 سالہ دھائی بائی بہل شامل ہیں جن کا تعلق تھارپارکر سندھ سے ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pakistan seeks consular access for a hindu family arrested in rajasthan in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply