پاکستانی فوج ہندوستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری لانے کے خلاف نہیں:خارجہ ترجمان نفیس زکریا

اسلام آباد: پاکستان نے کہا ہے کہ اس کی فوج جمہوری عمل کی حامی ہے اور وہ ہندوستان کے ساتھ تعلقات معمول پر لانے کے خلاف نہیں ہے۔ پاکستان کی وزارت خارجہ کے ترجمان نفیس زکریا نے گزشتہ روز نامہ نگاروں سے کہا کہ پاکستان کی فوج اور حکومت کی قیادت کے درمیان اختلافات کی کوئی بھی کوشش کامیاب نہیں ہوگی اور فوج بدستور جمہوری عمل کی حمایت کرتی رہے گی۔
ترجمان نے یہ رائے ہندوستان کے وزیر اعظم نریندر مودی کے ذریعہ گزشتہ دنوں کئے گئے اس تبصرے کے بعد ظاہر کی ہے کہ” یہ فیصلہ کرنا مشکل ہے کہ پاکستان میں کس سے بات چیت کی جائے، جمہوری طریقے سے منتخب کی گئی حکومت سے یا کسی دوسرے سے؟”۔ مسٹر زکریا نے کہا کہ” دونوں فریقوں کے درمیان مسائل کو حل کرنے کے لئے بات چیت ہی سب سے زیادہ مناسب طریقہ ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی کہا ہے اور آج بھی کہہ رہے ہیں کہ ہم بات چیت کے لئے تیار ہیں”۔
انہوں نے ممبئی کے دہشت گردانہ حملے کے معاملے کی عدالتی سماعت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ خارجہ سکریٹری اعجاز چودھری ہندوستان کے خارجہ سکریٹری ایس جے شنکر کو خط لکھ کر اور ثبوتوں کا مطالبہ کر چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس کے لئے اور ثبوتوں کی ضرورت ہے لیکن ہندوستان نے اس کا جواب نہیں دیا ہے۔ اس سے پہلے اسی ہفتے وزیر اعظم کے خارجہ امور کے مشیر خاص سرتاج عزیز کہہ چکے ہیں کہ ہندوستان بات چیت کے عمل کو آگے بڑھانے میں رکاوٹ بن رہا ہے۔ (یو این آئی)

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Pakistan army not against normalising relations with india says nafees zakarya in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply