ہندستان کی محدود فوجی کارروائی میڈیا میں سرخیاں بٹورنے کیلئے کی گئی،فائرنگ سے دو فوجی ہلاک:پاکستان

اسلام آباد: (یو این آئی) پاکستان نے آج کہا کہ اس کے قبضے والے کشمیر میں ہندستان کی سرحد پار سے کارروائی میں اس کے دو فوجی مارے گئے۔ پاکستانی اخبار ’ڈان‘ کی ایک رپورٹ میں پاکستانی فوج کے محکمہ رابطہ عامہ انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کے حوالے سے یہ اطلاع دی گئی ہے۔
پاکستانی فوج نے اپنے فوجیوں کی ہلاکت کی توثیق کرتے ہوئے ہندستان کے اس دعوے کو مسترد کردیا کہ یہ کارروائی ’سرجیکل اسٹرائکس‘ تھیں۔ آئی ایس پی آر نے ہندستانی فوج کے فوجی مینیجنگ ڈائریکٹر جنرل لیفٹننٹ جنرل رنبیر سنگھ کی پریس کانفرنس کے کچھ دیر بعد ایک بیان جاری کرکے کہا کہ ہندستان کی جانب سے سرحد پار سے فائرنگ کی گئی۔ آئی ایس پی آر نے کہاکہ فائرنگ کل رات گئے ڈھائی بجے شروع کی گئی جو صبح آٹھ بجے تک جاری رہی۔ بیان میں کہا گیا کہ ہندستان نے بھیمبر ہاٹ، اسپرنگ کیل اور لیپ سیکٹروں میں ایل او سی پر بلا اشتعال فائرنگ کی اور پاکستانی فوجیوں نے بھی جوابی کارروائی کی۔
جموں و کشمیر کے اڑی سیکٹر میں 18 ستمبر کو فوجی کیمپ پر دہشت گردانہ حملے کے بعد ہندستان اور پاکستان کے مابین کشیدگی میں اضافہ ہوا ہے۔ ہندستان نے اس حملے کیلئے پاکستان سے آئے دہشت گردوں کو ذمہ دار قرار دیا ہے جس کی پاکستان نے تردید کی ہے۔ ہندستان کے ڈی جی ایم او لیفٹننٹ سنگھ نے دہلی میں ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ہندستانی فوج نے کل رات جموں و کشمیر میں کنٹرول لائن پار کرکے پاکستان کے قبضے والے کشمیر میں واقع دہشت گردوں کے کچھ لانچنگ پیڈ پر محدود فوجی (سرجیکل اسٹرائکس) کارروائی کرکے کئی دہشت گردوں کو مار گرایا ہے۔
پاکستانی فوج نے حالانکہ ہندستان کی اس کارروائی کے سرجیکل اسٹرائکس ہونے کے دعوے کو مسترد کیا ہے۔ فوج نے ایک بیان میں کہا کہ ہندستان کی جانب سے یہ کارروائی میڈیا میں سرخیاں بٹورنے کیلئے کی گئی اور سچائی کو چھپانے کیلئے اسے سرجیکل اسٹرائکس کہا جا رہا ہے۔ پاکستان واضح کرتا ہے کہ اگر ا س کی سرزمین پر سرجیکل اسٹرائکس کی گئی تو اس کا سخت جواب دیا جائے گا۔

Title: pak army rubbishes indian surgical strikes | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply