اسددرانی سے ہی پوچھ گچھ کیوں، مشرف نے بھی تو بیانات دیے ہیں:نواز شریف

اسلام آباد: سابق وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے انٹرسروسز انٹیلی جنس کے سابق سربراہ ریٹائرڈ لیفٹننٹ جنرل اسد درانی کی ہندوستان کی خفیہ ایجنسی را کے سابق سربراہ اے ایس دولات کے اشتراک سے تحریر کردہ کتاب سے پیدا تنازعہ کے حوالے سے کہا کہ اس معاملہ میں صرف ایک شخص سے ہی تفتیش کرنے کی کوئی تک نہیں ہے۔

منگل کے روز احتسابی عدالت کے باہر میڈیا کے نمائندوں سے بات کرتے ہوئے نواز نے کہا کہ یہ بات اپنی جگہ درست کہ کتاب اسد درانی نے لکھی ہے لیکن سابق صدر ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف اور سابق فوجی سربراہ شاہد عزیز نے بھی بیانات دیے ہیں۔ سابق وزیر اعظم نے مزید کہا کہ اس معاملہ کی گہرائی تک پہنچنے کے لیے ایک مشاورتی اجلاس کے بعد ایک قومی انکوائری کمیشن تشکیل دیا جانا چاہیے۔

واضح ہو کہ درانی نے، جو اگست1990تا مارچ1992آئی ایس آئی کے سربراہ کے عہدے پر تھے،”اسپائی کرونیکلز : را، آئی ایس آئی اور ایلوژن آف پیس“ دولات کے ساتھ مشترکہ طور پر لکھی تھی۔اور اس ضمن میں پیر کے روز ان کی فوجی ہیڈ کوراٹر میں طلبی ہو چکی ہے۔جہان ان کے بیان سے فوج مطمئن نہیں ہے ۔اس لیے اس نے ایک کورٹ آف انکوائری بٹھا دی ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No point in investigating just one person nawaz on durrani controversy in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply