ایران پاکستان کے درمیان تعلقا ت کا فیصلہ کوئی فرد یا گروپ نہیں کر سکتا: ایرانی سفیر ہنر دوست

اسلام آباد:ایران کی مسلح افواج کے سربراہ کی دھمکی پر پاکستان کے اظہار ناراضگی کرنے کے چند گھنٹے بعد ہی ایران کے سفیر متعین پاکستان مہدی ہنر دوست نے کہا کہ ایرانی جنرل کے بیان کو پاکستان میں میڈیا نے غلط انداز میں پیش کیا ہے۔ایران پاکستان کی سرحدی حدود کے اندر دراندازی کرنے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتا۔ ایرانی سفیر نے یہ بات ایک نجی ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے کہی۔ایرانی سفیر کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے رہنما مسلسل ایک دوسرے سے رابطے میں ہیں اور سرحدی معاملات کو بات چیت کے ذریعے حل کر لیا جائے گا۔
مہدی ہنر دوست کا مزید کہنا تھا کہ ایران اور پاکستان دونوں برادر اسلامی ملک ہیں اور ہمارے درمیان ہر معاملے کو مذاکرات ہی کے ذریعے حل کر لیا جاتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اگر دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کا فیصلہ ہوا تو دونوں ملک مل کر کریں گے۔دہشت گردی دونوں اسلامی ملکوں کا مشترکہ مسئلہ ہے اور دہشت گردوں کے خلاف ہمیں مل کر اقدام کرنا چاہئے ۔ امید ہے کہ دونوں برادر ملک اس مسئلے کو پر امن طریقہ سے حل کر لیں گے۔ انہوں نے یہ بات بھی زور دے کر کہی کہ پاکستان اور ایران کے درمیان دو طرفہ تعلقات کا تعین کوئی فرد یا گروپ نہیں کر سکتا۔
یاد رہے کہ چند دن پہلے ایرانی سرحدی افواج پر حملے میں 10 ایرانی فوجی جاں بحق ہو گئے تھے جس کے بعد ایران اور پاکستان کے درمیان تلخیاں بڑھ گئیں تھیں اور ایرانی فوجی سربراہ یہاں تک کہہ گئے تھے کہ اگر پاکستانی حکومت نے اپنی سرزمین سے ایران میں حملے کرنے والے دہشت گردوں کی نکیل نہ کسی تو ایران پاکستان کے اندر قائم دہشت گردوں کے محفوظ ٹھکانوں کوخود ہی نشانہ بنائے گا۔

Title: no force terror outfit can determine pak iran ties iranian ambassador in Urdu | In Category: پاکستان  ( pakistan ) Urdu News

Leave a Reply