آفریدی کو امریکہ کے حوالے کرنے کا کوئی معاہدہ نہیںہوا :پاکستان

اسلام آباد: خارجہ دفتر نے جمعرات کے روز ان افواہوں کی تردید کر دی کہ ایک کالعدم انتہاپسند گروپ سے مبینہ تعلقات رکھنے کے جرم میں قید زنداں بھگت رہے ڈاکٹر شکیل آفریدی کی، جنہوں نے القاعدہ سربراہ اسامہ بن لادن تک سی آئی اے کی رسائی کرائی تھی، پشاور سے اڈیالہ جیل منتقلی حکومت امریکہ سے ممکنہ معاہدے کا ایک جزو ہے۔ اپنی ہفتہ واری بریفنگ میں دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے اس پر اصرار کیا کہ حکومتی افسران عافیہ صدیقی یا حسین حقانی کے تبادلہ میں آفریدی کو امریکہ کے سپرد کرنے کام کوئی منصوبہ نہیںبنا رہے۔واضح ہوکہ عافیہ صدیقی افغانستان میںفوجی افسروں اور امریکی ایجنٹوں کے اقدام قتل کے جرم میں ایک امریکی جیل میں قید محض کاٹ رہی ہیں جبکہ حسین حقانی، جو پاکستان کے سفیر متعین امریکہ ہیں، 2011میں بے نقاب ہونے والے میمو گیٹ اسکینڈل میں اصل ملزم ہیں اور امریکہ میں بود و باش اختیا رکیے ہیں۔ڈاکٹر فیصل نے میڈیا کی ان رپورٹوںپر سوالوں کا کوئی جواب نہیں دیا جن میں کہا گیا تھاکہ سی آئی اے نے آفریدی کو پشاور کی جیل سے فرار کرانے کی کوشش کی تھی ۔انہوں نے بس اتنا کہاکہ اس سلسلہ مین انہیں کوئی معلومات نہیں ہیں کیونکہ معاملہ وزارت داخلہ کا ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: No deal with us to hand over dr shakeel afridi fo insists in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply