اگر وزارت سے مستعفی ہونے کا سبب بتادوں تو پارٹی اور قیادت کو نقصان ہوگا:چودھری نثار

اسلام آباد:پارٹی قیادت سے نالاں و ناراض پاکستان مسلم لیگ نواز گروپ کے ممتاز رہنما و سابق وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے اسلام آباد میں ایک پریس کانفرنس میں پارٹی قیادت سے اپنے اختلافات کا کھل کر اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ کوئی بھی شخص وفاقی وزارت جیسا اہم عہدے بلا سبب نہیں چھوڑتا بلکہ اس کی مختلف وجوہات ہوتی ہیں جن کا اگر ذکر کیا جائے تو اس سے پارٹی کو نقصان ہوگا اسی لیےمیں ان وجوہات کو ذکر کرنا نہیں چاہتا ۔ ان کا کہنا ہے کہ اس وقت پارٹی اور قیادت آزمائشی دور سے گذر رہی ہے اور میں ان کو مزید آزمائشمیں نہیں ڈال سکتا۔چوہدری نثار کا مزید کہنا ہے کہ عدالتوں کو صرف سیاستدانوں کے پیچھے نہیں لگنا چاہئے بلکہ دیگر اداروں اور ان کے افراد کے خلاف بھی کارروائیاں کرنی چاہئیں۔
سابق صدر پرویز مشرف کے بیرون ملک جانے کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ وزارت داخلہ کا کام صرف نوٹیفکیشن جاری کرنا ہوتا ہے جبکہ باقی کام حکومت کو کرنا پڑتا ہے۔ ان کا کہنا ہے پرویز مشرف کو سپریم کورٹ سمیت دیگر عدالتوں نے اپنے فیصلوں کے ذریعے بیرون ملک جانے کا موقع فراہم کیا ہے۔ڈان لیکس کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ ڈان لیکس کی رپورٹ کو منظر عام پر لائے تاکہ حقیقت سب پر واضح ہو جائے۔انہوں نے کہا کہ کسی بھی خبر کو افشا کرنے کے معاملہ میں وہ ملوث نہیں ہیں۔پناما دستاویزات افشا کیس میں فیصلہ آنے سے کئی روز پہلے چودھری نثار نے پہلی بار پارٹی کے اندر اختلافات کے بارے میں زبان کھولی تھی اور دعویٰ کیا تھا انہیں پناما گیٹ کے حوالے سے مشاورتی عمل میں شامل نہیں کیا گیا تھا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Nisar opens up on differences with pml n leadership in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply