پسند کی شادی نہ کرنے پر بہو نے زہر دے کر 13سسرالیوں کو ہلاک کر دیا

اسلام آباد: صوبہ پنجاب کے مظفر پور کے دولت پور علاقہ میں اس وقت سنسنی دوڑ گئی جب ایک نو بیاہتا نے اپنی مرضی کے خلاف شادی کر دیے جانے پر لسی میں زہر ملا کر سسرال کے 13افراد کو ہلاک کر دیا جبکہ14دیگر بیمار پڑ گئے اور اسپتال میں زیر علاج ہیں۔
ذرائع کے مطابق 2 اگرچہ روز قبل مظفرگڑھ میں علی پور کے علاقے دولت پور میں زہریلی لسی پینے کے باعث 13 افراد کی موت کا یہ اندوہناک سانحہ ایک معمہ بن گیا تھا لیکن پولیس نے ہر پہلو سے تحقیقات کرنے کے بعد اس پراسرار واقعے پر سے پردہ اٹھا کر خاندان کے 13 افراد کی موت کا ذمہ دار نئی بہو آسیہ کو قرار دے دیا ۔ پولیس کا کہنا ہے کہ آسیہ نے پسند کی شادی نہ ہونے کی وجہ سے یہ ظالمانہ اقدام اٹھایا۔ آسیہ کو پولیس نے حراست میں لے لیا ہے تاہم تفتیش جاری ہے۔
پولیس کے مطابق 13 افراد کی ہلاکت کے بعد پولیس نے خاندان کے زندہ بچ جانے والے افراد سے تفتیش شروع کی اور اسی سلسلے میں واقعے میں ہلاک ہوجانے والے امجد کی بیوی کو زیر حراست لیا گیا اور جب تفتیش شروع کی گئی تو انکشاف ہوا کہ سسرالیوں کو زہرملی لسی پلانے میں گھر کی بہو کا ہی ہاتھ ہے۔
پولیس نے ابتدائی رپورٹ میں بتایا ہے کہ ملزمہ آسیہ کی آٹھ ماہ قبل امجد نامی شخص سے شادی ہوئی تاہم آسیہ اس رشتہ سے ناخوش تھی اور وہ اپنے آشنا سے شادی کرنا چاہتی تھی۔ اس نے بتایا کہ شوہر کو راستے سے ہٹانے کے لیے اس نے اسے دودھ میں زہر ملا کردیا لیکن کسی وجہ سے اس کا شوہر وہ دودھ نہیں پی سکا کے شوہر امجد نے دودھ نہیں پیا اور وہی دودھ بعد میںلسی بناتے وقت دہی میں ملا دیا گیا۔
نتیجہ میں ساری لسی زہریلی ہو گئی جسے پی کر 28 افراد متاثر ہوئے۔پولیس کا کہنا ہے کہ زہرکا اثر اس قدر شدید تھا کہ 2 روز میں 13 افراد کی موت واقع ہوچکی ہے اور تاحال 14 افراد اسپتال میں زیر علاج ہیں۔پولس نے بہو کے آشنا کی تلاش شروع کر دی ہے ۔اسے شبہ ہے کہ اس واردات مین اس کے آشنا کا بھی ہاتھ رہا ہوگا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: New bride accidentally kills 13 in laws while trying to poison husband in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply