پاکستان کی سپریم کورٹ کو نہال ہاشمی کی غیر مشروط معافی قبول کر لینی چاہیے تھی: رانا ثناءاللہ

لاہور: پنجاب کے وزیر قانون رانا ثنااللہ نے پاکستان مسلم لیگ نواز کے سنیٹر نہال ہاشمی کو ایک ماہ کی سزائے قید کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ ان کی غیر مشروط معافی قبول کرلینی چاہیے تھی۔
رانا کا کہنا ہے کہ جس شخص نے بھی عدالت سے غیرمشروط معافی مانگی اسے معاف کردیا گیا لیکن نہال ہاشمی کے کیس میں عدالتی روایت سے ہٹ کر فیصلہ دیا گیا۔ اور عدالت عظمیٰ نے ان کا معافی نامہ نہ صرف پھاڑ کر پھینک دیا بلکہ ان پر ایکماہ کی سزا کے ساتھ ساتھ50ہزار روپے جرمانہ بھی کر دیا۔
لاہور میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ ججز کے نام پر پیسے لینے اور سپریم کورٹ کی عمارت کے باہر کھڑے ہو کر عدلیہ کا مذاق اڑانے والے بابر اعوان کو غیر مشروط معافی پر معاف کیا جاسکتا ہے تو نہال ہاشمی کو بھی معاف کیا جاسکتا ہے۔ جبکہ نہال ہاشمی نے بھی عدالت سے غیر مشروط معافی مانگی لیکن ان کے کیس میں عدالتی روایت سے ہٹ کر فیصلہ دیا گیا۔

Title: nehal hashmis unconditional apology should have been accepted sanaullah | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply