نوا ز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے کرپشن ریفرنسز کیس سے خود کو الگ کر لیا

اسلام آباد: معزول وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے نیشنل احتساب بیورو کی جانب سے شریف خاندان کے خلاف کرپشن ریفرنسز کیس سے خود کو علیحدہ کر لیا۔ احتسابی عدالت کے جج محمد بشیر نے العزیزیہ ریفرنس میں جیسے ہی کاروائی شروع کی حارث نے کہا کہ وہ اس کیس سے باقاعدہ الگ ہو رہے ہیں۔

اتوار کے روز سپریم کورٹ نے تینوں ریفرینس کے نپٹارے کے لیے احتساب عدالت کو30دن کی مہلت دیتے ہوئے تجویز کیا تھا کہ کیس کی سماعت یومیہ بنیاد پر ہو۔حارث نے کہا کہ اس طرح کے دباؤ میں کام کرنا ان کے بس کی بات نہیں ہے۔انہوں نے ہفتہ اتور کو بھی جبکہ عدالت کی تعطیلات ہوتی ہیں کام کرنے سے اظہار معذوری کیا۔

حارث نے اپنا وکالت نامہ بھی واپس لے لیا جس پر احتسابی جج نے نواز شریف سے پوچھا کہ کیا وہ کوئی دوسرا وکیل کرنا چاہیں گے یا حارث کو کسی سے منسلک رہنے کے لیے آمادہ کریں گے۔جس پر نواز شریف نے جواب دیا کہ اس ضمن میں کوئی فیصلہ کرنے کے لیے انہیں تھوڑا وقت دیا جائے اور عدالت سے ساتھ ہی درخواست بھی کی کہ کچھ روز کے لیے مقدمہ کی سماعت ملتوی کر دی جائے۔

حارث نے کہا کہ جب وہ سمجھتے ہیں کہ وہ اپنی ذمہ داری سے انصاف نہیں کر سکتے تو بہتر یہی ہوگا کہ وہ کیس سے الگ ہو جائیں۔

Title: nawazs lawyer recuses himself from corruption references | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply