نواز شریف اداروں پر تنقید کر کے عوام کو تشدد پر اکسانے کی کوشش کررہے ہیں:پی ٹی آئی

اسلام آباد: (ایجنسی) پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما فیصل واوڈا نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی اداروں پر تنقید کو ملک کے لیے بدقسمتی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ اس طرح عوام کو تشدد پر اکسانے کی کوشش کررہے ہیں۔ڈان نیوز کے  ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ ایک شخص جو تین مرتبہ ملک کا وزیراعظم رہ چکا ہو اور وہ اسی ملک کے اداروں خصوصاً عدلیہ کے فیصلوں پر انہیں تنقید کا نشانہ بنائے، یہ بہت ہی نامناسب بات ہے۔ انہوں نے کہا کہ ‘جلسوں میں ایسے بیانات دینا اور تقاریر کرنے کا بظاہر مقصد لوگوں کو مشتعل کرنا ہے اور اس طرح حالات مزید محاذ آرائی کی جانب جائیں گے’۔
ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف اور عمران خان کے کیسز میں زمین و آسمان کا فرق ہے اور یہی بات خود عدالت بھی واضح کرچکی ہے، لہذا پھر بھی انہیں ایک دوسرے سے جوڑنا یقین افسوس کی بات ہے۔ پی ٹی آئی رہنما نے کہا کہ ‘عمران خان اور نواز شریف میں یہ فرق ہے کہ عمران خان ملک میں پیسہ لے کر آئے، جبکہ نواز شریف نے قومی دولت کو غیر قانونی طور پر بیرون ملک منتقل کیا’۔ فیصل واوڈا نے کہا کہ آج کی سیاست اصولوں کی بنیاد پر نہیں، بلکہ الزام ترشی پر چل رہی ہے اور اگر عدالت کسی کے خلاف فیصلہ دے تو وہ قانون بدل کر پارٹی کا صدر بن جاتا ہے۔
ان کا کہنا تھا کہ پہلے ہی حکومت کی رٹ موجود نہیں اور اب اگر قانون حرکت میں آیا ہے تو اس پر بھی تنقید کی جارہی ہے، جبکہ ہم نے جہانگیر ترین کے خلاف فیصلے کو فوراً قبول کیا، کیونکہ پی ٹی آئی کبھی اداروں پر تنقید کے بارے میں سوچ بھی نہیں سکتی۔ انہوں نے کہا کہ آج نواز شریف، پرویز مشرف کے باہر جانے پر سوال اٹھا رہے ہیں تو انہیں یہ سوچنے کی بھی ضرورت ہے کہ انہی کی اپنی حکومت نے مشرف کے لیے راستے بنائے تاکہ وہ آرٹیکل 6 کی کارروائی کا سامنا کرنے سے بچ سکیں۔
خیال رہے کہ گذشتہ روز سابق وزیر اعظم نواز شریف نے سوال اٹھایا تھا کہ کیا اس ملک میں کوئی ایسی عدالت ہوگی جو پرویز مشرف کے خلاف فیصلہ دے؟ لیکن اب یہ وقت ا?ئے گا کہ مشرف کے خلاف فیصلہ آئے گا۔

Title: nawaz sharif trying to incite publicpti | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply