زینب سانحہ پر وکیلوںکی ہڑتال کو حق بجانب قرار نہیں دیا جا سکتا: چیف جسٹس آف پاکستان

اسلام آباد: پاکستان کے چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایک سات سالہ بچی زینب سے جنسی زیادتی کے بعد اسے بے رحمی سے قتل کردینے کی دل خراش واردات کو نہایت افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس درندگی نے دنیا بھر میں پاکستان کا سر شرم سے جھکا دیا ۔
جسٹس ثاقب نے الرازی میڈیکل کالج مقدمہ کی سماعت کرتے ہوئے کہا کہ یہ درست ہے پورے ملک میں اس واردات پر غم و غصہ کی لہر ہے تاہم وکیلوںکی ہڑتال کو حق بجانب قرار نہیں دیاجا سکتا۔
واضح رہے کہ پنجاب بار کونسل نے اس بچی کے قاتلوں کی فی الفور گرفتاری کے مطالبہ میں عدالتوں کا بائیکاٹ کرنے کااعلان کیا ہے۔ جسٹس نثار نے کہاکہ اس درندگی پر ان سے زیادہ ان کی اہلیہ کو صدمہ ہے۔
چیف جسٹس نے زینب سے جنسی زیادتی کے بعد قتل کی وحشیانہ واردات کے خلاف ملک گیر پیمانے پر احتجاج کے بعد اس معاملہ کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے پنجاب کے انسپکٹرجنرل آف پولس کو حکم دیا کہ 24گھنٹے کے اندر اس معاملہ کی رپورٹ پیش کی جائے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Nations head hangs in shame over zainabs rape murder cjp in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply