قومی احتساب بیورو چودھری شوگر ملز کیس میں نواز شریف سے روزانہ دو بار پوچھ گچھ کرتا ہے

لاہور: گذشتہ جمعہ کو جب سے سابق وزیر اعظم اور پاکستان مسلم لیگ نواز کے کلیدی رہنما میاں محمد نواز شریف کو چودھری شوگر ملز کیس میںجسمانی ریمانڈ پر قومی احتساب بیورو(این اے بی) کے حوالے کیا گیا ہے اسی وقت سے بیورو سابق وزیر اعظم سے یومیہ دو بار تفتیش کر رہا ہے۔

بیورو نے چودھری شوگر ملز کیس میں نواز شریف کو گرفتار کر کے 25اکتوبر تک انہیں جسمانی ریمانڈ پر اپنی تحویل میں لے لیا تھا۔

اپنی تحویل میں لینے کے بعد بیوو نے انہیں اپنے ٹھوکر نیاز بیگ میں واقع صوبائی ہیڈ کوارٹر میں رکھا ۔لیکن ایک ذریعہ کے مطابق مسٹر شریف تفتیش کاروں سے تعاون نہیں کر رہے اور ہر سوال کے جواب میں ان کاایک ہی جواب ہوتا ہے کہ ملز کے حصص کی منتقلی میں کوئی غیر قانونی لین دین نہیں کیا گیا اور اس ضمن میں ان کے بیٹے حسین نواز سے تحقیقات کی جائیں کیونکہ وہی خاندانی کاروبار سنبھالا ہوا ہے۔

بیورو کے مطابق پنجاب کے وزیر خزانہ ، وزیر اعلیٰ اور پاکستان کے وزیر اعظم کے طو رپر نواز نے چودھری شوگر ملز کے زیادہ تر حصص لیے ہوئے تھے۔

نواز شریف نے1992تا2016 چودھری شوگر ملز اور شمیم شوگر ملز میں2ارب روپے کی سرمایہ کاری کی تھی جو کہ ان کی معلوم ذرائع آمدنی سے میل نہیں کھاتی تھی اور اس سے کہیں زیادہ تھی۔نواز نے 1991میں چودھری شوگر ملز کے قیام کے وقت افراد خاندان کے نام سے 43ملین روپے کے 4.32ملین حصص خریدے تھے۔

نواز شریف پر یہ الزام بھی ہے کہ انہوں نےاپنی بیٹی مریم نواز ،بھتیجے یوسف عباس اور دیگر ملزمین کے ساتھ ایک غیر ملکی ناصر عبد اللہ لوٹھا کے نام سے شوگر ملز میں 11ملین حصص کے فرضی اور جھوٹی منتقلی دکھا کر 410ملین روپے پر مشتمل کالا دھن سفید کیا تھا۔ذریعہ نے مزید بتایا کہ پھر یہی حصص 2014میں نواز کو ان کے دور وزارت عظمیٰ میں منتقل کر دیے گئے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Nab grills nawaz twice a day in sugar mills case in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.