پرویز مشرف کو بھگوڑا قرار دیے جانے کے باوجود دوبارہ د ڈپلومیٹک پاسپورٹ جاری کرد یا گیا

اسلام آباد: وزیر داخلہ احسن اقبال نے اس بات کی تصدیق کر دی کہ سابق صدر ریٹائرڈ جنرل پرویز مشرف کے پاسپورٹ کی میعاد ختم ہونے سے دو ماہ پہلے ہی انہیںنہ صرف ایک نیا پاسپورٹ جاری کیا گیا بلکہ انہیں سابق سربراہ مملکت ہونے کے ناطے دوبارہ ڈپلومیٹک پاسپورٹ دیا گیا۔
سابق فوجی حکمراں کو کئی مقدمات بشمول غداری ، ججوں کی گرفتاری اور بے نظیر بھٹو قتل مقدمہ میں بھگوڑا قرار دیا جاچکا ہے۔تاہم یہ واضح نہیںہو سکا ہے کہ کیا ان کے پاسپورٹ کی تجدید کے ساتھ ساتھ انہیں ڈپلومیٹک پاسپورٹ جاری کرنے کے لیے کوئی خصوصی اجازت دی گئی تھی اور اگر دی گئی تھی تو کس نے دی تھی۔
وزارت داخلہ نے دعویٰ کیا کہ جنرل مشرف کو اس خدشہ کے بغیر ڈپلومیٹک پاسپورٹ جاری کای گیا تھا کہ وہ غداری مقدمہ کا سامنا کرنے کے لیے پاکستان واپسی کا کوئی بہانہ تراشنے کے لیے اس پاسپورٹ کو اپنا ہتھیار بنا سکتے ہیں۔
انہیں پاکستان واپس آنے کے لیے پاسپورٹ کی ضرورت تھی۔وہ یہ بہانہ کر سکتے تھے کہ چونکہ ان کے پاسپورٹ کی میعاد ختم ہو چکی ہے اس لیے وہ وطن واپس نہیں آسکتے اور حکومت پر الزام لگا سکتے تھے کہ وہ ان کی پاکستان واپسی کی راہیں مسدود کر رہی ہے۔

Title: musharrafs diplomatic passport renewed in january ahsan iqbal | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply