لاہور میں شرعی عدالت کے خلاف نالش کرنے والے کو اغوا کر کے اذیتیں دی گئیں

لاہور:پاکستان میں شرعی عدالت کی شکل میں متوازی عدالتیں قائم کرنے کے لیے ہر قسم کے حربے استعمال کرنے کا ایک ثبوت اس وقت ملا جب یہاں ایک مذہبی تنظیم کی خود ساختہ شرعی عدالت کے خلاف لاہور ہائی کورٹ میں قانونی چارہ جوئی کرنے والے ایک پراپرٹی ڈیلر کو اغوا کر کے اس کو اذیتیں دی گئیں اور پھر ڈرا دھمکا کر بیہوش کرنے کے بعد سنسان علاقہ میں پھینک دیا گیا۔
سروسز اسپتال کے ایمرجنسی وارڈ میں ایک بستر پر پڑے خالد سعید نام کے ایک شخص نے ، جس کا چہرہ خون آلود تھا، بڑی نقاہت بھری آوازمیں روداد بیان کرتے ہوئے بتایا کہ وہ اپنی موٹر سائیکل پر ہائی کورٹ جا رہا تھا کہ دو باریش نوجوان وں نے سمن آباد کے پہلے چوراہے کے قریب اس کی بائیک رکوائی اور ان میں سے ایک نے اس کی بائیک سنبھال لی اور اس کا دوسرا ساتھی پیچھے بیٹھ گیا اور اسے درمیان میں کر لیا اور میانی صاحب قبرستان کی جانب چل پڑے۔
جماعت الدعویٰ کی تشکیل کردہ ایک شرعی عدالت نے زمین وجائیداد کی خرید و فروخت کے کاروبار میں سابق شراکت دار کی شکایت پر سعید کو طلب کیا تھا۔جس پر سعید نے لاہور ہائی کورت سے رجوع کیا کہ جماعت الدعویٰ کی عدالت نے اسے نوٹس جاری کیا ہے۔ جس پرعدالت نے صوبائی داخلہ سکریٹری کو ہدایت کی کہ وہ معاملہ کو دیکھے اور مدعی کا موقف سننے کے بعد قانون کی روشنی میں اس کا فیصلہ کریں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Man who moved lahore high court against shariah court kidnapped harassed in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply