عدالت عظمیٰ سے نچلی عدالت تک کوئی سی پیک کے پراجکٹوں پر حکم امتناعی جاری نہ کرے: جوڈیشیل باڈی

اسلام آباد: چین کے پیہم اصرار و درخواست پر پاکستان کے اعلیٰ عدالتی پالیسی ساز ادارے نے سپریم کورٹ اور نچلی عدالتوں سے کہا ہے کہ وہ سی پیک سے متعلق پراجکٹوں پر یکطرفہ حکم امتناعی جاری نہ کریں۔
چیف جسٹس آف پاکستان میاںثاقب نثار کی سربراہی والی قومی جوڈیشیل پالیسی ساز کمیٹی (این جے پی ایم سی) نے ، جس کے دیگر اراکین میں چار وں ہائی کورٹس کے چیف جسٹس اور وفاقی شریعت کورٹ کے منصف اعلیٰ ہیں،چین –
پاکستان اقتصادی راہداری کے حوالے سے تشکیل دی گئی مرکزی ادارے پلاننگ کمیشن کو بھی ہدایت کی ہے کہ سی پیک سے متعلق معاملات مٰن اسے کسی مدد کی ضرورت محسوس ہو تو وہ سپریم کورٹ سے مشاورت کرے۔
سرکاری ریکارڈ کے مطابق یہ فیصلے این جے پی ایم سی کے ایک خصوصی اجلاس مین لیے گئے۔پاکستان میں بڑھتی چینی سرمایہ کاری اور امداد کی اہمیت کے پیش نظر ہونے والے اس اجلاس میں تقریباً درجن بھر وفاقی سکریٹریوں اور ان کے سینیئر نمائندوں کو خاص طور پر مدعو کیا گیا تھا۔

Title: judicial body tells courts not to issue stay orders on cpec | In Category: پاکستان  ( pakistan )

Leave a Reply