جیش محمد کا سرغنہ مسعود اظہر فوجی اسپتال میں بم دھماکہ میں ہلاک؟

اسلام آباد: یہاں کے ایک فوجی اسپتال میں زبردست بم دھماکہ ہوا جس میں کم از کم10افراد زخمی ہو گئے۔زخمیوں میں جیش محمد کا بانی مسعود اظہر بھی شامل ہے۔

اس دھماکے میں ہلاکتوں اور زخمی ہونے کے حوالے سے متضاد خبریں گردش کر رہی ہیں ۔ ٹوئیٹر پر بھی مختلف خیالات ظاہر کیے جارہے ہیں ۔

یہاں تک کہ اس دھماکہ میں مسعود اظہرکے ہلاک ہوجانے تک کا دعویٰ کیا جارہا ہے۔

چونکہ کوئٹہ میںحقوق انسانی کے ایک کارکن احسان اللہ میاخیل کا کہنا ہے کہ فوجی اہلکار واقعہ کی تفصیل جاننے کے لیے فوجی اسپتال پہنچنے والے میڈیا کے نمائندوں کو نہ تو اندر جانے دے رہے ہیں اور نہ ہی ان کے کسی سوال کا جواب دے رہے ہیں۔

بلکہ میڈیا سے سختی کے ساتھ کہہ دیا گیا ہے کہ وہ اس خبر کو نہ دیں۔ اس لیے اس دعوے کو اور بھی تقویت پہنچ رہی ہے۔بتایا جارہا ہے کہ جس اسپتال میں یہ دھماکہ ہوا ہے اسی اسپتال میں مسعود اظہر بھی داخل ہے۔

واضح ہو کہ مسعود اظہر اقوام متحدہ کی جانب سے دہشت گرد قرار دی جانے والی تنظیم جیش محمد کا،جو زیادہ تر پاکستانی مقبوضہ کشمیر میں سرگرم ہے، بانی اور قائد ہے۔

ہندوستان نے بھی مسعود اظہر کو انتہائی مطلوب دہشت گرد کی فہرست میں شامل کیا ہوا ہے۔اس دھماکے کے حوالے سے جس کے بارے میں یہ بھی کہا جا رہا ہے کہ یہ ایک حملہ تھا،حکومت کی جانب سے کوئی بیان نہیں جاری کیا گیا ہے۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jem chief masood azhar killed in pakistan blast claims twitter in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.