حسد کا کوئی علاج نہیں،میں نے تو بس چاروں قل پڑھ کر عبد الباسط کی تنقید کو نظر انداز کر دیا:اعزاز چودھری

اسلام آباد: سابق خارجہ سکریٹری اور موجودہ سفیر برائے امریکہ اعزاز احمد چودھری نے سابق پاکستانی ہائی کمشنر متعین ہند عبدالباسط کو بڑا حاسد قراردیا۔ سابق پاکستانی ہائی کمشنر نے اپنے ایک خط میں جہاں مسٹر چودھری کو پاکستان کا ’بدترین‘ سیکریٹری خارجہ قرار دیا تھا وہیں مسٹر چودھری نے یہ کہتے ہوئے اپنا ردعمل ظاہر کیا کہ حسد کا کوئی علاج نہیں ہوتا۔ اخبار نویسوں کو ارسال کردہ ایک ای میل میں اعزاز چودھری نے کہا ہے کہ ان کے نام عبدالباسط کا جو خط سوشل میڈیا پر گردش کر رہا ہے وہ بہت ہی ناشائستہ تھاہے۔ یہ اطلاع روزنامہ ڈان کی ایک رپورٹ میں دی گئی ہے۔ مسٹرچودھری نے کہاکہ عبدالباسط کی یہ سوچ غلط ہے کہ وہ ان کی وجہ سے سیکرٹری خارجہ نہیں بن پائے۔۔۔ لیکن حسد کا کوئی علاج نہیں ، اس لیے انہوں نے ان پر چاروں قل خصوصاً سورہ الفلق پڑھ کر انہیں نظرانداز کر دیا ہے اوراس زیادہ کچھ کہنا ضروری نہیں سمجھتا۔ڈان کے مطابق مسٹر چودھری نے یہ بھی کہا کہ ”ہم میں سے کچھ عبدالباسط جیسے لوگ یہ تسلیم کرنے میں ناکام ہوجاتے ہیں کہ زندگی انسانی کوشش اور قسمت کا ایک مجموعہ ہے اور زندگی ہمیں جو کچھ دیتی ہے، ہمیں اسے قبول کرتے ہوئے اپنے خالق کا شکریہ ادا کرنا چاہیے“۔ مسٹر چودھری نے اخبار نویسوں کو لکھا ہے کہ بہت سے ساتھیوں نے انہیں عبد الباسط کے ذلت آمیز اور غیر افسرانہ برتاو¿ پران کے لئے حمایت اور دوستی کا اظہار کیا۔ اخبار کے مطابق انہوں نے کہا کہ پہلے انہوں نے اس معاملے کو اللہ کے سپرد کرنا چاہاتھا، لیکن بات سب سوشل میڈیا پر آجانے کے بعدانہوں نے بھی اپنا موقف شیئر کرنے کو ہی ترجیح دی۔ واضح رہے کہ سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پر گردش کرنے والے ایک خط کے مطابق سابق پاکستانی ہائی کمشنر عبدالباسط نے امریکہ میں موجود پاکستانی سفیر اعزاز احمد چودھری کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہیں پاکستان کا ‘بد ترین’ سیکریٹری خارجہ قرار دے دیا تھا اور کہا تھا کہ ‘اعزاز چودھری سے واشنگٹن میں ان کی ذمہ داریاں واپس لینا پاکستان کے قومی مفاد میں ہوگا یعنی ان کو 27 فروری کے بعد ان کے عہدے پر توسیع نہیں ملنی چاہیے۔ خط کے مطابق عبدالباسط نے مبینہ طور پر یہاں تک کہہ دیا تھا کہا کہ اتنے اہم عہدے پر کسی کمزور اور مشکوک شخص کی تعیناتی کے بعد اللہ پاکستان کی مدد کرے۔ خط پر 5 جولائی 2017 کی تاریخ کے ساتھ عبدالباسط کے دستخط بھی موجود ہیں، جبکہ اس خط کی کاپی کو دفتر خارجہ کے ڈائریکٹر کو بھی ارسال کیا گیا تھا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Jealousy has no remedy says aizaz chaudhry in response to abdul basits rude letter in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply