داعش پاکستان کے لیے ایک سنگین خطرہ بن چکی ہے:سابق وزیر داخلہ رحمٰن ملک

اسلام آباد:پاکستان کے سابق وزیر داخلہ رحمان ملک نے کہا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کی نئی لہر آگئی ہے اور پانا چنار میں یوم القدس پر ہونے والا ہولناک دہشت گردانہ حملہ، جس میںکم و بیش75افراد ہلاک ہوئے ہیں،اس کا کھلا ثبوت ہے۔ رحمٰن ملک نے مزید کہا کہ پاکستان میں داعش ایک سنگین خطرہ بن چکی ہے جبکہ یوم القدس پر دہشت گردانہ حملے اس بات کا ثبوت ہیں کہ پاکستان میں دہشت گردی کے عفریت نے پھر پیر پھیلانے شروع کر دیے ہیں ۔رحمان ملک کا کہنا تھا کہ میں دو سال سے اس بات پر تاکید کر رہا ہوں کہ پاکستان میں داعش واقعاتاً ایک سنگین خطرہ بن چکی ہے اور یہ تنظیم پاکستان کے مختلف شہروں میں خفیہ طور پر اپنی سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔
سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ پاراچنار میں ہونے والے دھماکے میں سعودی عرب اور قطر ملوث نہیں ہیں بلکہ ان حملوں واضح طور پر داعش نے سازش کی ہے اور بے گناہ لوگوں کے خون سے اپنے دامن کو داغدار کیا ہے۔پیپلز پارٹی کے مرکزی رہنما کا کہنا تھا کہ افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ دہشت گرد تنظیم لشکر جھنگوی کا داعش کے ساتھ گٹھ جوڑ ہو چکا ہے اور یہ گروہ بھی پاکستانی عوام کے خلاف دہشت گردی کی سنگین وارداتوں میں اہم کردار ادا کر رہی ہے۔
رحمان ملک نے وفاقی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ داعش صوبہ بلوچستان میں اپنی کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہے، جبکہ انٹیلیجنس اداروں کی طرف سے اطلاع دینے کے باوجود بھی انکے خلاف کوئی کارراوئی انجام نہیں دی جاتی۔واضح رہے کہ رحمان ملک ان شخصیات میں سے ہیں کہ جو کافی عرصہ سے پاکستان میں داعش کی سرگرمیوں پر خبردار کرتے رہے ہیں جبکہ حکومتی ادارے ان کی طرف سے اس خطرے کو مسلسل رد کرتے رہے ہیں۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Is emerging as a biggest threat in the pakistan says rehman malik in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply