داتا دربار خود کش حملہ میں خاتون سہولت کارسمیت 3دہشت گرد گرفتار

لاہور:انٹیلی جنس ایجنسیوں کے ذرائع کے مطابق داتا درباردھماکے کی تحقیقات کرنے والی ٹیم کو اس وقت زبردست کامیابی ملی جب اس نے ان تین دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا جن کے بارے میں کہا جاتاہے کہ وہ اس حملہ میں ملوث ہیں۔

ان تینوں دہشت گردوں کی گرفتاری شہر کے بھاٹی گیٹ علاقہ میں بدھ کو رات دیر گئے کی جانے والی ایک کارروائی کے دوران عمل میں آئی۔انٹیلی جنس ذرائع نے مزید بتایا کہ گرفتار کیے جانے والے تینوں دہشت گردوں میں ایک خاتون سہولت کار بھی شامل ہے۔

داتا دربار دھماکے کی تحقیقات کرنے والی ٹیم ان تینوں دہشت گردوں کو مزید پوچھ گچھ کے لیے کسی نامعلوم مقام پر لے گئی ہے۔واضح ہو کہ 8مئی کو داتا دربار مزار کے باہر ہونے والے دھماکے میں 12افراد ہلاک اور دو درجن سے زائدزخمی ہوئے تھے۔

داتا دربار کے باہر کھڑی پولس وین کو نشانہ بنا کر کیے گئے دھماکہ کے ہلاک شدگان میں پانچ پولس اہلکار اور ایک سیکورٹی گارڈ بھی شامل ہیں۔ ہلاک پولس اہلکاروں کی شناخت ہیڈ کانسٹبل شاہد نذیر، ہیڈ کانسٹبل محمد سہیل، ہیڈ کانسٹبل گلزار احمد اور کانسٹبل محمد سلیم کے طور پر کی گئی ہے۔

گذشتہ ہفتہ سلامتی دستوں نے ایک ٹی اسٹال پر چھاپہ مار نے کے بعد گڑھی ساہو علاقہ سے پانچ مشتبہ سہولت کاروں کو گرفتار کر لیا تھا۔جبکہ ایک سہولت کار دو روز بعد گوجرانوالہ سے گرفتار کیا گیا۔پولس نے مبینہ خود کش بمبار کاایک خاکہ بھی جاری کیا تھا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Intelligence agencies arrest three terrorists allegedly involved in lahore blast in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News
What do you think? Write Your Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published.