پاکستان میں جاسوسی کرنے کے جرم میں ایک ہندوستانی کوتین سال قید کی سزا

پشاور: حامد نہال انصاری نام کے ایک ہندوستانی کو، جو تین سال پہلے کوہاٹ سے لاپتہ تھے،ایک فوجی عدالت نے جاسوسی کے جرم میں تین سال قید کی سزا سنا دی۔اہلکاروں کے مطابق انصاری کو کوہاٹ میں دو روز پہلے قصور وار دیا گیا تھا اور پھر انہیں پشاور کی سینٹرل جیل منتقل کر دیا گیا۔پاکستانی فوجی قانون کے تحت انہیں اپیل کا حق حاصل ہے۔ذرائع نے بتایا کہ مجرم نے جاسوسی کے لیے پاکستان میں غیر قانونی طریقہ سے داخل ہونے کا اعتراف کر لیا۔ذرائع نے مزید بتایا کہ مسٹر انصاری کے 7فیس بک اکاو¿نٹ اور30ای میل ایڈریسز ہیں۔ ان کے پاس سے کئی حساس دستاویزات بھی ضبط کی گئیں۔مجرم کو انٹیلی جنس بیورو اور پولس نے نومبر2012میں اپنی تحویل میں لیا تھا۔ اسی وقت سے ان کا کوئی اتہ پتہ نہیں تھا۔31سالہ مسڑانصاری ایم بی اے ہیں اور ممبئی منجمنٹ کالج میں تدریسی فرائض انجام دیتے ہیں۔ ان کی والدہ نے دعویٰ کیا کہ وہ اپنے کچھ پاکستانی دوستوں کے رابطے میں تھا جنہوں نے اسے ورغلایا کہ وہ ویزے کے بغیر افغانستان سے پاکستان میں داخل ہو جائے ۔ان کی والدہ نے یہ بھی بتایا کہ سوشل میڈیا کے توسط سے ان کے بیٹے کی دوستی ہو گئی تھی اور وہ اسی خاتون سے ملنے پاکستان گیا تھا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Indian national sentenced to 3 years for espionage in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply