لندن فلیٹ کو اثاثہ ظاہر نہ کرنا عمران خان کے لیے قانونی پیچیدگیاں پیدا کر سکتا ہے:سپریم کورٹ

اسلام آباد: پاکستان تحریک ِ انصاف پارٹی (پی ٹی آئی )کے سربراہ عمران خان کے خلاف،جن پر غیر ملکی چندہ پاکستان لانے کا الزام ہے،نااہلی کیس کی سماعت کرتے ہوئے چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ دستاویزات میں لندن فلیٹ کو اثاثہ کے طور پر ڈکلیر نہ کرنے کے قانونی نتائج مرتب ہو سکتے ہیں۔
7ستمبر کو کیس کی سماعت موخر کردینے کے بعد چیف جسٹس کی سربراہی میں ایک تین ججی بنچ نے معاملہ کی سماعت شروع کی تو مسٹر خان نے اپنے وکیل نعیم بخاری کے توسط سے عدالت کو مطلع کیا کہ چونکہ فلیٹ پاکستان میں نہیں تھا اور بیرون ملک کی آمدن سے اسے خریدا گیا تھا اس لیے اپنے دستاویزات میں اس کا ذکر نہیں کیا گیا۔
سماعت کے دوران سپریم کورٹ نے کہا کہ مسٹر خان کے وکیل وہ دستاویزات پیش کریں جس سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ عمران خان نے اپنی سابقہ اہلیہ جمیمہ سے 5لاکھ 60ہزار پونڈ قرض لیے اور پھر واپس کر دیے تھے۔جس پر بخاری نے عدالت کو بتایا کہ رائل بینک کے کھاتے کے توسط سے رقم جمیمہ کو منتقل کی گئی تھی۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Imrans failure to declare london flat as an asset can have legal consequences sc in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply