وزارت دفاع وضاحت کرے کہ اسد درانی کا نام ای سی ایل میں کیوں شامل کیا گیا: اسلام آباد ہائیکورٹ

اسلام آباد:اسلام آباد ہائی کورٹ نے جمعرات کے روز وزارت دفاع کو حکم دیا کہ چونکہ انٹر سروسز انٹیلی جنس(آئی ایس آئی) کے سابق سربراہ ریٹائرڈ لیفٹننٹ جنرل اسد درانی نے اپنا نام ایکزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل)سے حذف کرنے کی اپیل کی ہے لہٰذا ان کے حوالے سے کی گئی تحقیقات کی مکمل رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے۔

ہندوستانی جاسوس ایجنسی ریسرچ اینڈ انالئسنگ ون (را)کے سابق سربراہ امرجیت سنگھ دلات کے ساتھ مشترکہ طور پر ایک کتاب”دی اسپائی کرونیکلز“ تصنیف کرنے کے حولے سے 28مئی کو جنرل ہیڈ کوارٹر میں حاضر ہو کر اپناموقف پیش کرنے والے درانی کا نام پاکستان کی فوج کی درخاست پر ایکزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کر دیا گیا تھا۔

اسد درانی نے ای سی ایل سے اپنا نام حذف کرانے کے لیے اسلام آباد ہائی کورت میں2اکتوبر کو پٹیشن ڈالی تھی۔درانی کی عذر داری کی سماعت کرتے ہوئے جسٹس محسن اختر کیانی نے وزارت داخلہ کو یہ حکم بھی دیا کہ وہ یہ بھی وضاحت کریں کہ درانی کا نام ای سی ایل میں کیوں شامل کیا گیا۔

Read all Latest pakistan news in Urdu at urdutahzeeb.com. Stay updated with us for Daily urdu news from pakistan and more news in Urdu. Like and follow us on Facebook

Title: Ihc orders ministries to submit reports on former spy chief durrani in Urdu | In Category: پاکستان Pakistan Urdu News

Leave a Reply